.

کویت میں "تحریف شدہ" اذان نے ہنگامہ کھڑا کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کویت میں ایک مسجد کے چوکیدار نے تحریف شدہ اذان دے کر ہنگامہ کھڑا کر دیا۔ الاحمدی صوبے کی مسجد البوص میں مذکورہ شخص نے اذان میں "اللہ اکبر" کے بجائے "اللہ کویت اکبر" کے الفاظ ادا کیے۔

اذان کے وقت سڑک پر گزرنے والے بعض راہ گیروں نے اس واقعے کی وڈیو بنا کر سوشل میڈیا پر پوسٹ کر دی۔ اس کے نتیجے میں عوامی حلقوں میں شدید غم و غصّے کی لہر دوڑ گئی ہے۔

مقامی میڈیا نے اتوار کے روز بتایا کہ واقعے کا ذمّے دار چوکیدار بنگلہ دیشی شہریت رکھتا ہے۔ وزارت اوقاف نے اسے حراست میں لے کر پوچھ گچھ کے لیے پیش کر دیا ہے۔

کویتی وزارت اوقاف میں الاحمدی صوبے کی مساجد کے انتظامی سربراہ ڈاکٹر احمد العتیبی کے مطابق یہ واقعہ مسجد کے نئے چوکیدار کی اپنی جدّت طرازی کے سبب پیش آیا۔ العتیبی نے بتایا کہ مسجد البوص رہائشی علاقوں سے دور واقع ہے جو مذبح خانے اور مویشی منڈی کے لوگوں کے لیے استعمال میں آتی ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ نئے چوکیدار نے یہ گمان کیا کہ مسجد کا مؤذن غیر حاضر ہے اور اس نے مسجد میں نمازیوں کے نہ ہونے کے باوجود بھی خود سے بڑھ کر اذان دے دی۔