.

الحدیدہ : حوثیوں کی صفوں میں عسکری سطح پر انحراف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عربی روزنامے "الشرق الاوسط" نے ہفتے کے روز بتایا ہے کہ الحدیدہ میں حوثیوں کی جانب سے مقرر کردہ فِفتھ ملٹری زون کا کمانڈر بریگڈیئر جنرل سعید ابو بکر الحریری باغیوں سے منحرف ہو کر یمنی سرکاری فوج میں شامل ہو گیا ہے۔

ادھر عسکری اور طبی ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ حوثیوں کا ایک کمانڈر عبدالکریم مروان اپنے کئی ساتھیوں سمیت الحدیدہ میں مارا گیا۔

ذرائع کے مطابق حوثی ملیشیا نے یمن کے صوبے المحویت میں ان متعدد کمانڈروں کی آخری رسوم ادا کیں جو مغربی ساحل کی پٹی پر ہلاک ہوئے۔ ان میں سرفہرست کرنل بندر یحیی معیض ہیں۔ اسی طرح حوثی رہ نما شرف محمد منصور القحوم بھی مارے جانے والوں میں شامل ہے۔

یمن کے لیے اقوام متحدہ کے بین الاقوامی ایلچی مارٹن گریفتھ پیر کے روز لیکسمبرگ میں یورپی یونین کے وزراء خارجہ کو ایک رپورٹ پیش کریں گے۔ سرکاری ذرائع نے العربیہ نیوز چینل کو باور کرایا ہے کہ یورپی یونین یمن کے تنازع کے خاتمے کے واسطے بین الاقوامی ایلچی کے منصوبے کو سپورٹ کرتی ہے۔

دوسری جانب یورپی یونین کی ترجمان مایا کوسیانشیچ نے بتایا کہ "ہم تنازع سے متعلق تمام فریقوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ مذاکرات کا دوبارہ آغاز کریں۔ ہم سمجھتے ہیں کہ تنازع کے عسکری حل کا کوئی وجود نہیں۔ بحران کے حل کے لیے اقوام متحدہ کے زیر نگرانی مذاکرات کے سوا کوئی دوسرا راستہ نہیں"۔