.

عراق : سوشل میڈیا پر وزیر تعلیم کا پیج ہیک، امتحانی سوالات پوسٹ کیے جانے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں نوجوانوں کے ایک گروپ نے فیس بک پر عراقی وزیر تعلیم ڈاکٹر محمد اقبال الصیدلی کے ذاتی پیج کو کئی گھنٹوں کے لیے ہیک کر کے اس پر جاری پیغامات میں وعدہ کیا ہے کہ ملک بھر میں انٹرمیڈیٹ کے بقیہ مضامین کے امتحانی سوالات بھی ٹیلی گرام ویب سائٹ کے ذریعے پوسٹ کیے جائیں گے۔ یاد رہے کہ دو روز قبل ہونے والے اسلامیات کے پرچے کے سوالات "گروپ ٹربو عراق" نامی گروہ کی جانب سے پوسٹ کیے گئے تھے۔

وزارت تعلیم کی جانب سے ملک بھر میں حالیہ امتحانات کے دوران پرچہ آؤٹ ہونے سے روکنے کے سخت ترین اقدامات کے باوجود پہلے روز اسلامیات کے پرچے کے سوالات منظر عام پر آ کر پھیل گئے۔ اس کے نتیجے میں امتحان کے انعقاد کے دو روز بعد اس کو منسوخ کر دیا گیا۔ وزارت تعلیم کے اقدامات کے تحت امتحان شروع ہونے سے قبل دو گھنٹے کے لیے پورے عراق میں انٹرنیٹ کی خدمت کو بند کر دیا جاتا ہے۔

تعلیمی حلقوں اور چیدہ شخصیات نے وزارت تعلیم کی جانب سے اسلامیات کا پرچہ منسوخ کرنے کے فیصلے پر سخت حیرت کا اظہار کیا ہے۔ اس سے قبل مذکورہ وزارت نے اس مضمون کا پرچہ آؤٹ ہونے کے حوالے سے تمام تر دعوؤں کو مسترد کر دیا تھا۔ بعض اہم تعلیمی شخصیات نے وزارت تعلیم کے اقدامات کو بے فائدہ اور امتحانی انتظامات کی ذمے دار کمیٹی کو نا اہل قرار دیا۔

ادھر وزارت تعلیم میں مرکزی امتحانی کمیٹی نے اپنے دو ارکان کو برطرف کر دیا۔ ان ارکان کا اسلامیات کا پرچہ آؤٹ کرانے میں ملوث ہونا ثابت ہو گیا تھا۔

بعض تعلیمی اسکالروں کے مطابق وزیر تعلیم کے ذاتی پیج کا ہیک ہونا اور اس پر بقیہ مضامین کے امتحانی سوالات آؤٹ ہونے سے متعلق پوسٹس کا کیا جانا طلبہ پر مزید نفسیاتی دباؤ کا سبب بنے گا جو اس صورت حال کو کئی برس کی پڑھائی کے بعد ان کے پیشہ ورانہ اور اکیڈمک مستقبل کے ساتھ کھلواڑ شمار کر رہے ہیں۔

عراق میں 21 جون سے 12 جولائی تک ملک بھر میں انٹرمیڈیٹ کے سالانہ امتحانات کا انعقاد ہو رہا ہے۔ ان امتحانات میں ایک لاکھ سے زیادہ طلبہ و طالبات شرکت کر رہے ہیں۔