شامی شہریوں کی حج پر پابندی کی خبریں من گھڑت ہیں: سعودی عرب

امسال 18 ہزار شامی حاجیوں کے سعودی عرب استقبال کی تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی وزارت حج اور عمرہ نے ان خبروں کی سختی سے تردید کی ہے جن میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ سعودی حکومت نے شامی شہریوں کو حج پر آنے سے روک دیا ہے۔

سعودی وزارت حج کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ شامی شہریوں کے حج پر پابندی کی خبریں من گھڑت ہیں۔ حکومت نے 18000 شامی شہریوں کے حج کے استقبال کی تیاریاں مکمل کرلی ہیں۔ ان میں شامی عازمین حج کے ہمراہ آنے والے طبی اور انتظامی عملے کے 850 افراد بھی شامل ہیں۔

خیال رہے کہ سعودی عرب کی حکومت کی جانب سے حج اور عمرہ کے مواقع پر فراہم کی جانے والی سہولیات اور خدمات پر شامی حجاج کرام نے الریاض کی تعریف کی ہے۔

سعودی عرب کی وزارت حج کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ شامی پاسپورٹ کے حامل افراد کو حج کی ادائی سے روکنے کی خبریں بے بنیاد ہیں۔ شام سمیت کسی بھی دوسرے ملک کے مسلمانوں کو فریضہ حج کی ادائی سے روکنے کا کوئی حکم جاری نہیں کیا گیا ہے۔ سعودی حکومت رنگ، نسل، زبان اور دیگر کسی بھی قسم کے امتیازات سے بالا تر ہوکر دنیا بھر کے مسلمانوں اور فرزندان توحید کے فریضہ حج کی ادائی میں ان کی مدد کو اپنا فرض سمجھتا ہے۔ بیان میں مزید کہاگیا ہے کہ سنہ 1439ھ کے حج کے موقع پر دنیا بھر کے80 ممالک سے لاکھوں عازمین حج کی رجسٹریشن مکمل کرلی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں