.

امارات: 9 ایرانی شخصیات اور اداروں کے کھاتے منجمد کرنے کے اقدامات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات میں Securities and Commodities Authority نے سکیورٹیز اور کموڈیٹیز کے شعبے میں کام کرنے والی تمام کمپنیوں کو ایک نوٹیفکیشن جاری کیا ہے جس میں اُن اقدامات کی پیروی کو لازم قرار دیا گیا ہے جو 2018ء میں کابینہ کی قرار داد نمبر 24 پر عمل درامد کے لیے ضروری ہیں۔ کابینہ کی یہ قرار داد دہشت گرد افراد اور تنظیموں سے متعلق امارات کی منظور شدہ فہرست سے متعلق ہے۔

اتھارٹی کے اقدامات میں تمام متعلقہ کمپنیوں سے یہ مطالبہ شامل ہے کہ فہرست میں شامل افراد اور اداروں کی تلاش اور اُن کے کھاتوں، مالی رقوم، سکیورٹیز اور کموڈیٹیز کے منجمد کرنے کو یقینی بنایا جائے۔ اس حوالے سے اماراتی فہرست میں ایرانی شہریت کے حامل 9 افراد اور ادارے شامل ہیں۔

اتھارٹی کا کہنا ہے کہ اس حوالے سے شک کی صورت میں سکیورٹیز اینڈ کموڈیٹیز اتھارٹی یا منی لانڈرنگ یونٹ کے ساتھ رابطہ کیا جانا چاہیے۔

اتھارٹی نے کمپنیوں پر زور دیا ہے کہ منی لانڈرنگ اور مشکوک کیسوں سے نمٹنے کے لیے مرکزی بینک اور سکیورٹیز اینڈ کموڈیٹیز اتھارٹی کو فوری طور پر کھاتوں کے منجمد کیے جانے کے حوالے سے کیے گئے اقدامات کی اطلاع دی جائے۔ اتھارٹی نے باور کرایا ہے کہ نوٹیفکیشن پر پوری طرح عمل درامد سے کمپنیاں خود کو متحدہ عرب امارات اور بیرون ملک سخت پابندیوں سے محفوظ رکھ سکتی ہیں۔