درعا میں ہلاک شامی فوجی افسران کی تدفین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

شام کے ری پبلیکن گارڈ سے وابستہ دو سینیر فوجی افسروں کی جنوبی شہر درعا میں اپوزیشن کے ساتھ لڑائی میں ہلاکت کے بعد گذشتہ روز سرکاری اور فوجی اعزاز واکرام کےساتھ ان کی تدفین کی گئی۔

’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کے مطابق مقتول شامی فوجی افسروں کی آخری رسومات میں سول اور عسکری قیادت اور مقتولین کے ورثاء کی بڑی تعداد موجود تھی۔ دونوں فوجی افسروں کو قتل ہونے کے بعد میجرجنرل کے عہدے پر ترقی بھی دی گئی۔

اخباری رپورٹس کے مطابق درعا میں ہلاک ہونے والے مجنر جنرل عماد عدنان ابراہیم کو اللاذقیہ گورنری میں اس کے آبائی شہر ’بیت یاشوط‘ میں دفن کیا گیا۔ جنازے کے موقع پر مقتول فوجی افسر کے اقارب شامی فوجیوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔

خیال رہے کہ مقتول میجر جنرل عماد ابراہیم کی صدر بشارالاسد کے ہمراہ یاد گاری تصاویر بھی سوشل میڈیا پر سامنے آچکی ہیں۔ جنرل عماد ابراہیم کا بشارالاسد کے ساتھ گہرے تعلقات تھے۔

درعا میں ہلاک ہونے والے دوسرے فوجی افسر میجر جنرل یوسف محمد علی کو طرطوس گورنری کے ’الدیکیش‘ شہر میں دفن کیا گیا۔ جنرل یوسف علی بھی درعا میں جبلہ کے مقام پر شامی باغیوں کے ایک حملے میں ہلاک ہوگئے تھے۔

خیال رہے کہ درعا میں اسدی فوج اور اس کی معاون ایرانی اور روسی افواج کے آپریشن کے دوران اپوزیشن کے حملوں میں شامی فوج کے 100 اہلکار ہلاک ہوچکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں