.

سیناء : مصری سکیورٹی فورسز کی کارروائی میں 11 جنگجو ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصری سکیورٹی فورسز نے جزیرہ نما سیناء میں دہشت گردوں کے خلاف جاری بڑی کارروائی کے دوران میں مزید گیارہ جنگجوؤں کو ہلاک کردیا ہے۔

مصرکی سرکاری خبررساں ایجنسی مینا نے ایک بے نامی سکیورٹی عہدہ دار کے حوالے سے بدھ کو اطلاع دی ہے کہ سکیورٹی فورسز نے صوبہ شمالی سیناء کے مرکزی شہر العریش میں جنگجوؤں کے ایک ٹھکانے پر چھاپا مار کارروائی کی تھی جس کے بعد ان کے درمیان جھڑپ شروع ہوگئی اور فائرنگ کے تبادلے میں گیارہ جنگجو مارے گئے ہیں۔

مینا نے مزید بتایا ہے کہ سکیورٹی فورسز نے دو دھماکا خیز ڈیوائسز کو ناکارہ بنا دیا ہے اور ہتھیار برآمد کر لیے ہیں۔تاہم اس نے یہ نہیں بتایا کہ سکیورٹی فورسز نے یہ کارروائی کب کی تھی اور آیا کوئی سکیورٹی اہلکار بھی ہلاک یا زخمی ہوا ہے یا نہیں۔واضح رہے کہ مصر نے جزیرہ نما سیناء میں آزاد میڈیا کے داخلے پر پابندی عاید کررکھی ہے۔

مصری فوج نے فروری میں ’’ سیناء 2018‘‘ کے نام سے جنگجوؤں کے خلاف بڑی کارروائی شروع کی تھی۔اس میں اب تک دو سو سے زیادہ مشتبہ دہشت گرد ہلاک ہوچکے ہیں اور پینتیس فوجی مارے گئے ہیں۔

انسانی حقوق کی عالمی تنظیم ہیومن رائٹس واچ کا کہنا ہے کہ مصری فورسز نے 9 فروری کو آپریشن کے آغاز کے بعد سے شمالی سیناء میں مشتبہ افراد کے مکانوں ، کاروباروں اور فارموں کو ڈھانے کا کام تیز کررکھا ہے جبکہ مصری فوج کا کہنا ہے کہ سیناء کے مقامی لوگ اس کی جنگجوؤں کے خلاف کارروائی کی حمایت کرتے ہیں اور ضرورت مندوں کو انسانی امداد مہیا کی جارہی ہے۔