صعدہ میں ’باقم ڈیم‘ اورالعبد پہاڑوں پر یمنی فوج کا کنٹرول

تازہ لڑائی میں 30 حوثی باغی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

یمن کی سرکاری فوج نے باغیوں کے گڑھ سمجھے جانے والی صعدہ گورنری میں باقم ڈیل اور العبد پہاڑی سلسلے سے حوثی باغیوں کو نکال باہر کرنے کے بعد وہاں پر یمن کا سرکاری پرچم لہرا دیا ہے۔

’العربیہ‘ چینل کے نامہ نگار کے مطابق بدھ کے روز یمن کی سرکاری فوج نے صعدہ میں اہم پیش قدمی کرتے ہوئے باقم ڈیم اور العبد پہاڑوں سے باغیوں کو نکال باہر کیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ صعدہ میں جاری لڑائی کے دوران سرکاری فوج اور اتحادی فوج کے حملوں میں کم سے کم 30 حوثی جنگجو ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے ہیں۔

یمن فوج کے برگیٰڈ 102 کےسربراہ بریگیڈیئر یاسر الحارثی نے ’العربیہ‘ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ یمن کی سرکاری فوج کو باغیوں کے خلاف صعدہ میں کارروائی کے لیے عرب فوج کی براہ راست مدد حاصل ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سرکاری فوج باقم ڈاریکٹوریٹ اور صعدہ گورنری کے مرکز کی طرف تیزی کے ساتھ پیش قدمی کر رہی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ باقم ڈیم اور العبد پہاڑوں پر موجود باغیوں کو نکال باہر کرنے کے لیے آپریشن ایک ہفتہ قبل شروع کیا گیا تھا۔ اس آپریشن میں عرب اتحادی فوج کی طرف سے بھرپور لاجسٹک سپورٹ مہیا کی گئی تھی۔

بریگیڈیئر الحارثی کا کہنا تھا کہ العبد پہاڑوں کا کنٹرول حاصل کرنا صعدہ سے باغیوں کو نکال باہر کرنے کے لیے پہلا ہدف تھا۔ سرکاری فوج نے العبد پہاڑوں، الوسط اور مزھر قصبے سے بھی باغیوں کو نکال باہر کیا ہے۔ اس دوران سرکاری فوج نے 350 میٹر پر پھیلا باقم ڈیم بھی باغیوں سے واپس لے لیا ہے۔


مقبول خبریں اہم خبریں