.

حوثیوں کی مدد کے لئے ایران جرمنی کو استعمال کر رہا ہے:امریکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی ذرائع ابلاغ نے انکشاف کیا ہے کہ ایران یمن کے حوثی شدت پسندوں کی معاونت کے لیے جرمنی کی سرزمین استعمال کررہا ہے۔

ہفت روزہ امریکی جریدے ’ٹائمز‘ نے اپنی رپورٹ میں حکومت کے ایک ذمہ دار ذریعے کےحوالے سے بتایا ہے کہ ایران جعلی کرنسی کی تیاری کے لیے جرمن کمپنیوں کی خدمات حاصل کررہا ہے۔ ایران کی طرف سے یمن کے حوثی باغیوں کے لیے کرنسی نوٹوں کی چھپائی کی خاطر جدید الات خرید کے جاتے ہیں۔ مخصوص علامات والے کاغذ اور چھپائی میں استعمال ہونے والی سیاہی بھی جرمنی سے خرید کی جاتی ہے۔

اخباری رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ یمن کے حوثی باغیوں کے لیے جعلی کرنسی کی تیاری کے گھناؤنے جُرم کی نگرانی ایرانی سپاہ پاسداران انقلاب کی جانب سے کی جاتی ہے۔ پاسداران انقلاب ہی کرنسی کی چھپائی کی مشینیں اور اس کے دیگر سامان کی خریداری کرتے ہیں۔ ان میں سے بعض مشینوں اور آلات کی قیمت لاکھوں ڈالر میں ہوتی ہے۔

رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ایران کی معاندانہ سرگرمیوں کی وجہ سے عدم تعاون اگر کوئی ملک ایران کے ساتھ زیادہ نرمی برت رہا ہے وہ جرمنی ہے۔

ایرانی پاسداران انقلاب کئی سال سے جعلی کرنسی کی تیاری کے لیے جرمنی کی ساختہ IRGC مشینری استعمال کر رہا ہے۔ جرمن ہی میں تیار ہونے والا کرنسی کاغذ اور سیاہی جسے دوسرے یورپی ملکوں کے ہاں بھی استعمال کیا جاتا ہے تہران کی طرف سے منگوائی جاتی ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ گذشتہ اپریل میں مریکی حکام نے جرمن حکومت پر واضح کیا تھا کہ ایران یقینی طورپر حوثی ملیشیا کی مالی معاونت کے لیے جرمن کمپنیوں کی خدمات حاصل کررہا ہے۔