.

پوتین کی ٹرمپ کو دورہ ماسکو کی دعوت، وائیٹ ہاؤس کا خیر مقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روسی صدر ولادی میر پوتین نے جمعہ کو اپنے امریکی ہم منصب ڈونلڈ ٹرمپ کو ماسکو کے دورے کی دعوت دی ہے۔ دوسری جانب وائیٹ ہاؤس نے روسی صدر کی طرف سے دورے کی دعوت کا خیر مقدم کیا ہے۔

جُمعہ کے روز ایک بیان میں روسی صدر ولادی میر پوتین نے کہا کہ انہوں نے اپنے امریکی ہم منصب ڈونلڈ ٹرمپ کو دورے کی دعوت دی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم ودونوں مزید ملاقاتوں کے لیے پرعزم ہیں مگر اس کے لیے حالات ساز بنانا ضروری ہیں۔

ادھر وائیٹ ہاؤس کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ روس کے دورے کے لیے تیار ہیں۔

خیال رہے کہ روسی اور امریکی صدر کے درمیان آخری ملاقات 16 جولائی کو ہالینڈ کے صدر مقام ھلسنکی میں ہوئی تھی۔ اس ملاقات پرامریکا کے سیاسی حلقوں کی طرف سے حکومت پر شدید تنقید بھی کی گئی۔

جنوبی افریقا میں منعقدہ ’بریکس‘ گروپ کی سربراہ کانفرنس کے موقع پر روسی صدر ولادی میر پوتین نے کہا کہ امریکا اور روس کی سربراہ قیادت میں محض ٹیلیفون پر بات چیت کافی نہیں۔ دونوں ملکوں کے سربراہوں کو بالمشافہ ملاقات کرنی چاہیے۔ ایران کا جوہری پروگرام اور کئی دوسرے عالمی تنازعات براہ راست ملاقاتوں بحث کے دوران ہی حل کیے جاسکتے ہیں۔

ان کے اس بیان کے جواب میں وائیٹ ہاؤس کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گی ہے کہ آئندہ سال کے آغاز میں صدر ٹرمپ اپنے روسی ہم منصب ولادی میر پوتین کا واشنگٹن میں استقبال کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ وہ کھلے دل کے ساتھ ماسکوکے دورے کی دعوت کو بھی قبول کرتے ہیں۔