لبنان کے سمندر میں فوجی ٹینکوں کو کیوں اُتارا گیا ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

لبنان کے جنوبی شہر صیدا میں جمعے کے روز فوج کے ٹینکوں کو سمندر کے بیچ اُتار دیا گیا۔ دل چسپ بات یہ ہے کہ یہ کارروائی سکیورٹی نوعیت کی تھی اور نہ عسکری نوعیت کی بلکہ منتظمین اس کا مقصد سیاحتی اور ماحولیاتی فوائد کا حامل پہلا "واٹر پارک" بنانا ہے۔

اس دوران عظیم الجثہ کرینوں نے 10 پرانی عسکری گاڑیوں کو صیدا شہر کے ساحل کے مقابل سمندر کی گہرائی میں پہنچا دیا۔

ایک متعلقہ لبنانی عہدے دار کے مطابق سمندری ماحولیاتی ترقی اور اس کے تحفظ کے لیے کام پر توجہ مرکوز کی جائے گا۔ عہدے دار نے مزید بتایا کہ زیر سمندر فوجی ٹینکوں کے دہانوں کا رخ مقبوضہ فلسطین کی جانب رہا تا کہ فسلطینی عوام کے ساتھ یک جہتی کا اظہار کیا جا سکے۔

مذکورہ کارروائی میں شہری دفاع اور پیشہ ورانہ غوطہ خوروں کی ایک ٹیم نے بھرپور معاونت کی۔

منتظمین کے مطابق یہ "واٹر پارک" غوطہ خوری کے شوقین افراد اور سمندری سیاحت کے چاہنے والوں کے واسطے کھلا ہو گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں