یمن نے ماہی گیروں کو عرب اتحادی جہازوں کے نزدیک آنے سے خبردار کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن کی حکومت نے یمنی ماہی گیروں کو خبردار کیا ہے کہ وہ یمن کے علاقائی پانی کی حدود سے تجاوز نہ کریں۔ ماہی گیروں سے یہ مطالبہ بھی کیا گیا ہے کہ وہ آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد کے بحری جہازوں کے قریب نہ جائیں۔

حکومت کی جانب سے جاری بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ عرب اتحاد کی افواج کے بحری جہازوں کی کارروائیوں کے علاقوں میں ماہی گیروں کی کشتیوں کی موجودگی کی صورت میں حوثی باغی تجارتی جہازوں کو نشانہ بنانے اور سمندری جہاز رانی کے لیے خطرہ بننے کے حوالے سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔

دوسری جانب توانائی، صںعت اور معدنی دولت کے سعودی وزیر خالد الفالح کا کہنا ہے کہ مملکت نے کل ہفتے کے روز سے آبنائے باب المندب کے راستے تیل کی ترسیل دوبارہ سے شروع کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ یہ فیصلہ اتحادی افواج کی جانب سے یہ یقین دہانی کرانے کے بعد سامنے آیا کہ آبنائے باب المندب اور جنوبی بحر احمر کے راستے عرب اتحاد کے بحری جہازوں کی سلامتی کو یقینی بنانے کے لیے اقدامات کر لیے گئے ہیں۔

ایران نواز حوثی ملیشیا کی جانب سے دو سعودی آئل ٹینکروں کے خلاف دہشت گرد حملوں کی ناکام کوششوں کے بعد سعودی عرب نے 25 جولائی کو آبنائے باب المندب کے راستے تیل کی کھیپوں کی منتقلی کو روک دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں