الحدیدہ میں سرکردہ حوثی کمانڈر ہلاک

سرکردہ قبائل نے یمن کی آئینی حکومت کا ساتھ دینے کا اعلان کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

حوثی باغیوں اور یمنی فوج کے درمیان الدریھمی کے وسطی علاقے میں گذشتہ دو دنوں سے جاری لڑائی میں الحدیدہ کے ویسٹ کوسٹ محاذ کا سرکردہ حوثی کمانڈر مارا گیا۔

فوجی ذرائع نے بتایا کہ حوثی کمانڈر منصور السودی المعروف ’ابو حمید‘ الدریھمی کے علاقے میں حوثی ملیشیا کی کوئیک ایکشن فورس کا سربراہ تھا۔

ادھر حجہ گورنری میں 330 سرکردہ سرداروں اور مشایخ کی پہلی کانفرنس منعقد ہوئی جس میں شرکاء نے حوثیوں کی جانب سے کی جانے والی خلاف ورزیوں اور یمن میں ایرانی مداخلت کی مذمت کی۔

شرکاء نے حجہ میں حوثیوں کی جانب پھیلائی گئی تباہی کا اپنی آنکھوں سے مشاہدہ کیا۔ انھوں نے شہر کے دورے کے بعد اہالیاں گورنری سے اپیل کی وہ باغیوں کو علاقے سے بیدخل کرنے کے لئے پولیس کے ہاتھ مضبوط کریں۔

کانفرنس کے شرکاء نے کامیابی تک یمن کی آئینی حکومت کی حمایت اور ساتھ دینے کی ضرورت پر زور دیا۔ انھوں نے کہ کہا کہ وہ یمن میں خوشحالی کا دور واپس لانے کے لئے ہر قسم کی جدوجہد کے لئے تیار ہیں۔


مقبول خبریں اہم خبریں