حوثیوں کی سرنگیں کھود کر الصلیف بندرگاہ کی ناکہ بندی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن کے عسکری ذریعے نے بتایا ہے کہ ایران نواز حوثی شدت پسندوں نے شمال مغربی الحدیدہ میں واقع الصلیف بندرگاہ تک سرکاری فوج کی پیش قدمی روکنے کے لیے بندرگاہ کے اطراف میں سرنگوں کا جال بچھایا گیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ حوثی شدت پسندوں نے فضائی کیمپ اور الصلیف بندرگاہ کے اطراف میں بڑے پیمانے پر سرنگیں کھودی گئی ہیں تاکہ سرکاری فوج کو زمینی پیش قدمی سے روکا جا سکے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ الصلیف بندرگاہ کے اطراف میں سرنگیں کھودنے کے نتیجے میں بندرگاہ کے ذریعے ہونے جاری امدادی آپریشن متاثرہو رہا ہے کیونکہ یمن جنگ کے متاثرین کے لیے امدادی سامان لے کرآنے والے بحری جہاز، گندم، غذائی اجناس اور دیگر ضروری سامان اسی بندرگاہ سے یمن لایا جاتا ہے۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ حوثی باغیوں نے شمالی الصلیف میں ماہی گیروں کو مچھلیوں کے شکا سے روک دیا ہے اور انہیں’حرفہ‘ نامی علاقے میں داخل ہونے کی اجازت نہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ جگہ جگہ پر چیک پوسٹیں قائم کرکےشہریوں کی جامہ تلاشی کا سلسلہ مزید بڑھا دیا گیا ہے۔

ادھر ایک دوسری پیش رفت نے حوثی باغیوں نے صنعاء میں اپنی لیڈر شپ کی قیام گاہوں اور ان کے دفاتر کے باہر خفیہ کیمرے لگا دیے ہیں۔

یمن کی ’خبر‘ نیوز ایجنسی نے ایک سیکیورٹی ذریعے کے حوالے سے بتایاکہ حوثیوں کی اعلیٰ قیادت کی طرف سے ہدایات جاری کی گئیں ہیں جن میں کہا گیا ہے کہ صنعاء میں سرکردہ رہ نما اپنے گھروں اور دفاترکےاندر اور باہر خفیہ کیمرے نصب کریں تاکہ کسی مشکوک شخص کی نشاندہی کی جاسکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں