.

برطانیہ: تیز رفتار گاڑی پارلیمنٹ کی سکیورٹی رکاوٹ سے ٹکرا گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانوی دارالحکومت لندن میں "اسکاٹ لینڈ" پولیس نے بتایا ہے کہ منگل کی صبح ایک تیز رفتار گاڑی پارلیمنٹ کی بیرونی سکیورٹی رکاوٹ سے ٹکرا گئی۔ اس کے نتیجے میں کئی راہ گیر زخمی ہو گئے۔

پولیس نے ٹوئیٹر پر جاری بیان میں بتایا کہ یہ واقعہ منگل کی صبح 7:37 پر پیش آیا۔ واقعے کے بعد گاڑی چلانے والے ڈرائیور کو حراست میں لے لیا گیا"۔

پولیس کا کہنا ہے کہ واقعے کے عوامل کے حوالے سے تمام امکانات کے بارے میں غور کیا جا رہا ہے۔ ویسٹ منسٹر میں پیش آنے والے اس واقعے کی تحقیقات دارالحکومت کی پولیس کا انسداد دہشت گردی یونٹ کر رہا ہے۔

سوشل میڈیا پر جاری تصاویر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ واقعے کے بعد پولیس اہل کار گاڑی کے ڈرائیور کو نکال کر لے جا رہے ہیں جس نے جینز کی پتلون اور سیاہ جیکٹ پہن رکھی تھی۔

یاد رہے کہ ویسٹ منسٹر شاہراہ پر گزشتہ برس ایک حملہ اُس وقت دیکھنے میں آیا تھا جب 52 سالہ برطانوی خالد مسعود نے لندن کے وسط میں دریائے ٹیمز پر بنے پُل پر پیدل چلنے والے افراد کو اپنی گاڑی سے کچل دیا تھا۔ اس کے بعد حملہ آور نے گاڑی سے باہر آ کر پارلیمنٹ کے سامنے ایک پولیس اہل کار کو موت کے گھاٹ اتارا۔ واقعے میں 5 افراد ہلاک اور 50 کے قریب زخمی ہو گئے تھے۔ واقعے کے اختتام پر حملہ آور خالد مسعود کو بھی پولیس نے ہلاک کر دیا۔