عراق میں دہشت گردی کے الزام میں شامی سمیت 6 قیدیوں کو پھانسی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراق کی وزارت انصاف کے مطابق ملک میں دہشت گردی کی کارروائیوں کےالزام میں ملوث ایک شامی شہری سمیت چھ مجرموں کو دی گئی سزائے موت پرعمل درآمد کردیا گیا ہے۔

وزارت انصاف کے مطابق عراق میں دہشت گردی اور خون خرابے میں ملوث چھ مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچا دیا گیا ہے۔ تمام مجرموں کو دی گئی سزا پرعمل درآمد سے قبل صدر مملکت سے بھی ان کی سزا کی توثیق کرائی گئی تھی جب کہ سزاؤں پرعمل درآمد کے لیے تمام قانونی تقاضے پورے کیے گئے۔

عراق کے ایک طبی ذرائع کے مطابق تمام ملزمان کو الناصریہ شہرمیں ایک جیل میں پھانسی دی گئی۔ ان میں ایک شامی شہری بھی شامل تھا۔

خیال رہے کہ جون 2018ء کو عراق کی ایک جیل میں 13 دہشت گردوں کو دی گئی سزائے موت پر وزیراعظم حیدر العبادی کی توثیق کے بعد عمل درآمد کیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ رواں سال کے دوران اب تک عراقی عدالتوں نے ترکی، سابق سوویت یونین اور دیگر 300 غیرملکی جنگجوؤں کو سزائے موت یا عمر قید کی سزائیں سنائی تھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں