.

داعش سے تعلق کے سبب 3 ایشیائی باشندوں پر امریکی پابندیاں عائد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزارت خزانہ کے ایک اعلان کے مطابق اُس نے داعش تنظیم کی ایک پروپیگنڈہ وڈیو میں شریک ہونے پر تین ایشیائی باشندوں کو اپنی بلیک لسٹ میں شامل کر لیا ہے۔

داعش تنظیم کی جانب سے 2016ء میں جاری اس وڈیو میں شام میں یرغمال بنائے گئے ایک قیدی کو موت کے گھاٹ اتارتے ہوئے دکھایا گیا تھا۔

جمعے کے روز امریکی وزارت خزانہ کے بیان میں واضح کیا گیا کہ جن افراد پر پابندیاں عائد کی گئیں ہیں ان کے نام یہ ہیں: محمد رافع الدين [ملائیشیا] ، محمد كريم يوسف فائز [انڈونیشیا] اور محمد رضا [فلپائن].

امریکی وزارت خزانہ کے مطابق 52 سالہ محمد رافع الدین شدت پسند تنظیم "جماعہ اسلامیہ" سے تعلق رکھنے کے سبب 2003ء سے 2006ء تک جیل میں رہا۔ مزید برآں 49 سالہ محمد کریم یوسف فائز غیر قانونی طور پر اسلحہ اور گولہ بارود رکھنے کی پاداش میں فلپائن میں نو برس جیل کی سلاخوں کے پیچھے رہا۔

وہ 2014ء میں جیل سے باہر آنے کے بعد شام چلا گیا اور داعش تنظیم میں شمولیت اختیار کر لی۔ جہاں تک 28 سالہ محمد رضا کا تعلق ہے تو اس کے بارے میں امریکی وزارت کا کہنا ہے کہ رضا 2012ء میں فلپائن میں بس دھماکے کی کارروائی کا ذمّے دار ہے۔ وہ 2017ء کے اوائل تک شام میں داعش تنظیم کی صفوں میں شامل ہو کر لڑتا رہا۔