مصر میں پہلی مرتبہ قبطی مسیحی خاتون کا صوبائی گورنر کے عہدے پر تقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصرکے صدرعبدالفتاح السیسی نے پہلی مرتبہ ایک قبطی عیسائی خاتون ایک صوبے کا گورنرمقرر کیا ہے اور اس خاتون سمیت جمعرات کو مختلف صوبائی گورنروں سے ان کے عہدے کا حلف لیا ہے۔

صدرالسیسی نے منال عواد میخائل کو صوبہ دمیاط کی نئی گورنر مقرر کیا ہے۔اس سے پہلے وہ صوبہ جیزہ کے گورنر کی نائب کے طور پر خدمات انجام دے رہی تھیں۔

صدر السیسی نے جمعرات کو صوبہ قاہرہ ، جیزہ ، الاقصر ، اسوان اور شمالی سیناء کے نئے گورنر مقرر کیے ہیں۔

انھوں نے گذشتہ سال صوبہ بحیرہ میں پہلی مرتبہ کسی خاتون کو گورنرمقرر کیا تھا۔انھیں بھی آج تبدیل کردیا گیا ہے۔

قبطی عیسائی مصرکی کل آبادی قریباً دس کروڑ کا دس فی صد ہیں اوروہ ایک طویل عرصے سے امتیازی سلوک کی شکایت کرتے چلے آرہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ان کی اعلیٰ حکومتی عہدوں پر نمایندگی نہیں ہے۔

واضح رہے کہ مصر کی موجودہ کابینہ میں آٹھ خواتین وزراء شامل ہیں ۔اس ملک کی جدید تاریخ میں کابینہ میں خواتین کی یہ سب سے زیادہ نمایندگی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں