.

عراق:مُشتعل ھجوم نے بصرہ کے گورنر ہاؤس پر دھاوا بول دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں مہنگائی اور بدامنی کے خلاف جمعہ کے روز ملک کے مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عراق کے جنوبی شہر البصرہ میں جمعہ کے روز سیکڑوں مشتعل مظاہرین نے گورنر ہاؤس کے باہر ٹائر جلا کر احتجاج کیا اور اس کے بعد گورنر ہاؤس پر دھاوا بول دیا تاہم پولیس نے لاٹھی چارج اور آنسوگیس کی شیلنگ کر کے مظاہرین کو پیچھے ہٹا دیا۔

’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کے مطابق مقامی ذرائع کا کہنا ہے کہ مظاہرین نے حکومتی مراکز پر دستی بموں اور آتش گیر گولوں سے حملہ کیا۔ اس موقع پر پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے ان پر لاٹھی چارج کیا اور اشک آور گیس کی شیلنگ کی۔

جُمعہ کی شام تک جاری رہنے والے احتجاج کے دوران مظاہرین نے البصرہ کے گورنر ہاؤس کی ایک بیرونی دیوار گراد ی۔ مظاہرین سخت مشتعل تھے اور وہ حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کررہے تھے۔

خیال رہے کہ عراق میں تازہ مظاہرے اور کشیدگی ایک ایسے وقت میں پیدا ہوئی ہے جب دوسری جانب مئی میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے بعد حکومت کی تشکیل کی کوششیں جاری ہیں۔