.

البغدادی کے ’نائب‘ کو عراقی عدالت سے سزائے موت کا حکم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کی ایک فوج داری عدالت نے شدت پسند گروپ ’داعش‘ سے تعلق رکھنے والے ایک جنگجو کو سزائے موت دینے کا حکم دیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق جنگجو کمانڈر’داعش‘ میں اہم عہدوں پر فائز رہا ہے اور اسے تنظیم کےسربراہ ابو بکر البغدادی کا ’نائب‘ قرار دیا جاتا ہے۔

عراق کی جوڈیشل کونسل کے ترجمان عبدالستار بیرقدار نے ایک بیان میں بتایا کہ الکرخ کی فوج داری عدالت نے دہشت گرد اسماعیل العیثاوی کو دی ایک دوسری عدالت کی طرف سے دی گئی سزائے موت برقرار رکھی ہے۔ عدالت نے حکم دیا ہے کہ العیثاوی کو دہشت گردی کے جرائم میں ملوث ہونے پر سزائے موت دی جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ اسماعیل العیثاوی داعش میں اہم عہدوں پر فائز رہا ہے۔ اس نے داعش کی قائم کردہ الافتاء کمیٹی اور تنظیم کے درسی اور تعلیمی نظام کےلیے قائم کردہ کمیٹی کے رکن کے طورپر بھی کام کیا۔

وہ عراق سے فرار ہوکر شام چلا گیا تھا جہاں اس نے وہاں کے قبائل کے ساتھ اپنے تعلقات قائم کیے۔ وہاں سے ترکی فرار ہوگیا۔ عراق اور شام میں داعش پر سرزمین تنگ ہونے کے بعد ترکی میں بھی اس کا تعاقب کیا گیا اور ترکی انٹیلی جنس کی معاونت سے اسے حراست میں لیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ عراقی انٹیلی جنس حکام نے 15 فروری کو بتایا تھا کہ ترکی، عراق اور امریکا کی مشترکہ کوششوں سے داعش کے ایک سینیر کمانڈر کو ترکی میں گرفتاری کے بعد بغداد منتقل کیا گیا ہے۔