.

حزب اللہ نے اپنے گڑھ کو حوثی ملیشیا کا میڈیا پلیٹ فارم بنا دیا ہے: یمن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے وزیر اطلاعات معمر الاِریانی نے لبنانی ملیشیا حزب اللہ کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے جس نے بیروت میں اپنے گڑھ کو حوثی ملیشیا کی تشہیر کا پلیٹ فارم بنا دیا ہے۔ الاریانی نے لبنانی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ خود کو دور رکھنے کی پالیسی پر کاربند رہے۔

ہفتے کی شب اپنے سرکاری اکاؤنٹ پر سلسلہ وار ٹوئیٹس میں یمنی وزیر نے کہا کہ "حزب اللہ جو کہ لبنانی حکومت کا حصّہ ہے ،،، اس نے ایران نواز حوثی ملیشیا کو تجربے اور جنگجوؤں کی صورت میں لاجسٹک سپورٹ فراہم کرنے کا سلسلہ روکا نہیں بلکہ بیروت کے جنوبی مضافاتی علاقے ’’الضاحیہ‘‘ کو یمن میں باغیوں کی میڈیا مشینری چلانے اور عرب اتحاد پر تنقید کا پلیٹ فارم بنا دیا"۔

الاریانی نے مزید کہا کہ "میں لبنانی حکومت اور وزیر اطلاعات سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ خطّے میں تنازعات کے حوالے سے اپنی اعلان کردہ غیر جانبدار پالیسی پر کاربند رہیں۔ ساتھ ہی لبنان میں ایران نواز حوثی ملیشیا کی اُن تخریبی اور اشتعال انگیز سرگرمیوں کے روکے جانے کے لیے مداخلت کریں جو حزب اللہ کے سیاسی اور سکیورٹی پردے میں مالی سپورٹ کے ساتھ انجام دی جا رہی ہی"۔

یمنی وزیر نے مزید کہا کہ "میں لبنانی حکومت سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ المسیرہ سیٹلائٹ چینل کی نشریات اور لبنان میں سرگرم حوثی ملیشیا کے زیر انتظام ویب سائٹس کو روک دیں۔ یہ غیر قانونی سرگرمیاں جنگ کو طول دینے میں اپنا کردار ادا کر رہی ہیں اور ساتھ ہی یمن کے امن و استحکام اور دونوں برادر ملکوں اور عوام کے تعلقات کو بھی نقصان پہنچا رہی ہیں"۔