.

شام پر ایرانیوں کا میزائل حملہ، 10 سے زیادہ شہری جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران میں مقامی حلقوں کی جانب سے بعض وڈیو کلپس گردش میں آئے ہیں جن میں ایرانی پاسداران انقلاب کی جانب سے شام میں البوکمال کے علاقے پر داغے گئے چھ بیلسٹک میزائلوں میں سے دو میزائلوں کو مغربی ایران میں کرمانشاہ کے نزدیک جوانرود کے علاقے میں گرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ پاسداران کا دعوی ہے کہ یہ میزائل اہواز میں فوجی پریڈ پر ہونے والے حملے کے انتقام میں داغے گئے۔

وڈیو کلپس میں ایک میزائل کو سراب یاوری گاؤں میں گرتے ہوئے بھی دکھایا گیا ہے۔ اس کے نتیجے میں زرعی کاشت اور باغیچے برباد ہو گئے۔

ایران نے اعلان کیا تھا کہ اُس کی جانب سے یہ حملے "ذو الفقار" اور "قيام" میزائلوں اور ڈرون طیاروں کے ذریعے کیے گئے۔ ادھر شامی کارکنان نے بتایا ہے کہ ان میزائلوں سے دیر الزور کے مشرق میں باغوز اور ہجین کے علاقوں میں شہریوں کے گھروں کو نقصان پہنچا۔ مقامی آبادی کے مطابق حملے میں 10 سے زیادہ شہری جاں بحق ہو گئے۔

شام کے علاقے البوکمال کی سمت داغے جانے والے میزائل عراقی اراضی میں دیالی، صلاح الدین اور انبار صوبے سے گزرتے ہوئے سرحدی شہر القائم میں جا گرے۔ ایرانی پاسداران انقلاب نے دعوی کیا ہے کہ اس نے پیر کو علی الصبح زمین سے زمین تک مار کرنے والے درمیانی رینج کے 6 بیلسٹک میزائلوں کے ذریعے شام میں دریائے فرات کے مشرق میں واقع اہداف کو نشانہ بنایا۔ پاسداران کے مطابق یہ کارروائی کچھ دن پہلے اہواز کی فوجی پریڈ میں ہونے والے حملے کے جواب میں کی گئی۔

پاسداران انقلاب کی فضائیہ کے مطابق میزائل داغے جانے کے بعد فرات کے مشرق میں اسی علاقے میں 7 ڈرون طیاروں کے ذریعے مراکز کو نشانہ بنایا گیا۔