.

برھم صالح عراق کے نئے صدر منتخب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کی پارلیمنٹ نے کردستان نیشنل فیڈریشن کے نامزد امیدوار برھم صالح کو ملک کا نیا صدر منتخب کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق صدر کے انتخاب کے لیے کل منگل کے روز رائے شماری کی گئی۔ رائے دہی خُفیہ طریقے سے عمل میں لائی گئی۔ رائے شماری کے وقت ایوان میں 329 میں سے 302 ارکان موجود تھے۔ برھم صالح کو 219 اور ان کے مخالف امیدوار فواد حسین صرف 22 ووٹ حاصل کرسکے۔

صدر منتخب ہونے کے بعد برھم صالح نے عادل عبدالمہدی کو وزیراعظم مقرر کیا اور انہیں حکومت کی تشکیل کی دعوت دی ہے۔

رائے شماری کے پہلے مرحلے میں چار امیدوار صداری دوڑ سے باہر ہوگئے تھے۔ صدارتی دوڑ سے باہر ہونے والوں میں عبدالطیف جمال رشید، عمر البرزنجی، سلیم ھمزہ، عبدالکریم عبطان نے آزاد امیدواروں کی حیثیت سے مقابلے میں حصہ لیا۔

عراق کے دستور کے مطابق صدر منتخب ہونے کے لیے امیدوار کو پارلیمنٹ سے دو تہائی ووٹ حاصل کرنا ہوتے ہیں جو کہ موجودہ تناسب میں 220 ووٹ بنتے ہیں۔ اگر اس سے کم ووٹ حاصل کیے ہیں تو ووٹتنگ دوبارہ کرائی جاتی ہے اور نصف سے ایک ووٹ زاید لینے والا امیدوار کامیاب قرار پاتا ہے۔

پہلے مرحلے میں برھم صالح نے 165 اور فواد حسین نے 89 ووٹ لیے جب کہ 18 ووٹوں کے ساتھ خاتون امیدوار سروہ عبدالواحد تیسرے نمبر پر رہی۔ دوسرے مرحلے میں کردستان ڈیموکریٹک پارٹی نے فواد حسین کی حمایت سے دست برداری کا اعلان کیا۔ اس طرح برھم صالح ملک کے صدر منتخب ہوگئے۔