.

شام میں روسی فضائی حملے میں البغدادی کے چھوٹے بیٹے کی ہلاکت کی خبر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانوی اخبار "ڈیلی میل" میں بدھ کے روز شائع ہونے والی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 22 ستمبر کو شام میں روسی فضائیہ کے ایک حملے میں داعش تنظیم کے سرغنۃ ابو بکر البغدادی کا چھوٹا بیٹا مارا گیا۔

اخبار نے عراق سے تعلق رکھنے والے عسکری کمانڈر جبار المعموری کے حوالے سے بتایا کہ البغدادی کا چھوٹا بیٹا روسی حملے کے دوران اپنی کمین گاہ میں ہلاک ہوا۔ تاہم مقتول کے نام اور عمر کے حوالے سے کوئی تفصیل نہیں بتائی گئی۔

اس سے قبل رواں برس جولائی میں ابو بکر البغدادی کا ایک دوسرا بیٹا حذیفہ البدری شام میں حمص کے علاقے میں بشار حکومت اور روس کی فورسز کے خلاف لڑائی کے دوران ہلاک ہو گیا تھا۔

یاد رہے کہ دنیا میں اس وقت مطلوب ترین شخص ابو بکر البغدادی پانچ بیٹوں کا باپ ہے۔ وہ حالیہ برسوں میں کئی فضائی حملوں میں بچ نکلا اور کم از کم ایک بار زخمی ضرور ہوا۔ کئی بار البغدادی کی ہلاکت یا زخمی ہونے کی خبریں آتی رہی ہیں۔ تاہم ماہرین ابھی تک خبردار کر رہے ہیں کہ داعش کے سربراہ کو روپوشی کے فن میں مہارت حاصل ہے۔