حوثی ملیشیا کی مظاہرین کی خواتین کو اغواء کرنے کی دھمکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن میں سرگرم حوثی باغیوں نے مظالم کے خلاف احتجاج کرنے والوں کو بھی سنگین نتائج کی دھمکیاں دینا شروع کی ہیں۔ اطلاعات کے مطابق حوثیوں کی سیاسی کونسل کے ایک رکن حسین الاملح نے ایک ویڈیو پیغام میں صنعاء میں احتجاج کرنے والے شہریوں کو خبردار کیا ہے کہ وہ احتجاج اور مظاہروں کا سلسلہ بندکریں ورنہ ان کی خواتین کو اٹھا کرغائب کردیا جائے گا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سوشل میڈیا پر پھیلنے والی فوٹیج میں انسانی حقوق کے کارکنوں اور پیپلز کانگریس کے ارکان کی خواتین کو 'طوائفیں' قرار دے کر ان کے اغواء کی دھمکی دی گئی ہے۔

حوثی لیڈر کا کہنا ہے کہ جو لوگ خواتین کو مظاہروں میں شرکت کے لیے سڑکوں پر لاتے ہیں وہ یاد رکھیں کہ ان کی عورتوں کو گرفتار کیا جاسکتا ہے۔ الاملح کا کہنا ہے کہ خواتین کو اعتراض کا کوئی حق نہیں اور نہ ہی دارالحکومت صنعاء میں کسی کس اقتصادی، سیاسی اور دیگر پالیسیوں کے خلاف احتجاج کی اجازت دی جائے گی۔

حسین الاملح کا کہنا ہے کہ ان کی جماعت نے مظاہرین کو گرفتار کرنے کے لیے 40 بسیں تیار کر رکھی ہیں۔ سڑکوں پر نکلنے والوں کو فورا حراست میں لے کر جیلوں میں ڈالا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں