شام میں انتخابات ہونے تک وہاں سے کوچ نہیں کریں گے: ترکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن کا کہنا ہے کہ شام میں عوام کی جانب سے انتخابات کرائے جانے تک ترکی کی فورسز وہاں اپنے زیر کنٹرول علاقوں سے پیچھے نہیں ہٹیں گی۔

ایردوآن نے یہ بات جمعرات کے روز استنبول میں ایک بین الاقوامی فورم کے اختتام پر کہی۔

ترکی کی فورسز کو اگست 2016ء میں شام بھیجا گیا تا کہ سرحدی علاقے کو داعش تنظیم کے مسلح ارکان سے پاک کیا جا سکے۔ رواں سال شمالی شام کے علاقے عفرین میں کرد ملیشیاؤں کے خلاف بھی ایک آپریشن عمل میں آیا جن کو ترکی دہشت گرد شمار کرتا ہے۔

ایردوآن نے اپنے خطاب میں واضح کیا کہ "جب شام عوام اپنے ہاں انتخابات کرا لیں گے تو اس کے بعد ہم شام کو شامیوں کے حوالے کر کے وہاں سے نکل آئیں گے"۔

ترکی کے صدر نے باور کرایا کہ امریکا نے شام میں دہشت گرد تنظیموں کے لیے ہتھیاروں اور گولہ بارود سے بھرے 19 ہزار ٹرک بھیجے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں