.

سعودی عرب پر پابندیوں کی دھمکیاں مسترد کرتے ہیں: عرب لیگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب لیگ نے صحافی جمال خاشقجی کی ترکی کے شہر استنبول میں قائم سعودی سفارت خانے میں پراسرار گم شدگی میں سعودی عرب کومورد الزام ٹھہرانے اور اس واقعے کی آڑ میں ریاض پر پابندیاں عاید کرنے کی دھمکیاں مسترد کر دی ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق قاہرہ میں عرب لیگ کے صدر دفتر سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ جمال خاشقجی کی گم شدگی کی آڑ میں سعودی عرب پر اقتصادی پابندیاں عاید کرنے کی دھکمیاں یک طرفہ اقدامات اور سیاسی اہداف کے حصول کی مذموم کوشش ہے۔ عرب لیگ سعودی عرب پر پابندیوں کی کسی بھی کوشش کی مخالفت کرتی ہے۔

عرب لیگ کا کہنا ہے کہ سعودی عرب نے جمال خاشقجی کی گم شدگی کے حوالےسے عالمی اداروں کے ساتھ تحقیقات کی یقین دہانی کرائی ہے۔ سعودی عرب کی طرف سے معاملے کی تحقیقات کا انتظار کیا جانا چاہیے۔ سعودیہ پر دبائو بڑھانے کے لیے پابندیاں کی دھمکیاں دینے کا کوئی جواز نہیں۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ خطے اور عالمی استحکام اور امن میں سعودی عرب کا کلیدی کردار ہے۔ سعودیہ کے خلاف کوئی بھی انتقامی کارروائی خطے کی سلامتی اور استحکام کے لیے نقصادن دہ ثابت ہوسکتی ہے۔