احتجاجی مظاہرے میں شرکت پر ایرانی پاسداران انقلاب کا عہدیدار برطرف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب نے اپنے ایک عہدیدار کو دو ماہ پیشتر ایک عوامی احتجاجی مظاہرے میں شرکت کرنے اور مظاہرے سے خطاب کی پاداش میں عہدے سے ہٹا دیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق برطرف غلام رضا احمدی نے دو ماہ قبل مذہبی شہر قم میں سخت گیر مذہبی عناصر کی ایک احتجاجی ریلی میں شرکت کی تھی۔ اس ریلی میں شریک مظاہرین نے بینرز اور کتبے اٹھار کھے تھے جن پر صدر حسن روحانی مردہ باد کے نعرے تحریر کیے گئے تھے۔

اس سے قبل قم شہر میں پاسداران انقلاب کے زیرانتظام امام صادق بریگیڈ کے سربراہ حسین طیبی فر کو بھی ان کے عہدے سے ہٹا دیا گیا تھا۔

حسین طیبی فر نے 16 اگست کو قم میں ہونے والے ایک مظاہرے سے خطاب کیاتھا اور انہوں نے ایران کی دہشت گردی کی فنڈنگ کے انسداد کے عالمی معاہدے "FATF" میں شمولیت پر سخت تنقید کی تھی۔

خبر رسان ادارے"تسنیم" نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ غلام رضا احمدی کو 14 اکتوبر کو ان کے عہدے سے ہٹا دیا گیا ار ان کی جگہ محمد شاہ جراغی کو عہدہ سونپا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں