مصر : سیناء میں گذشتہ آٹھ ماہ سے جاری فوجی کارروائی میں 450 انتہا پسند ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

مصری فوج نے شورش زدہ علاقے جزیرہ نما سیناء میں گذشتہ آٹھ ماہ سے داعش کے جنگجوؤں کے خلاف جاری کارروائی میں قریباً ساڑھے چار سو انتہا پسندوں کو ہلاک کردیا ہے۔

مصری فوج نے فروری میں ’’سیناء 2018ء‘‘ کے نام سے داعش کے انتہا پسندوں کے قلع قمع کے لیے ایک بڑی فوجی کارروائی شروع کی تھی۔یہ آپریشن سیناء کے شمال میں ایک مسجد پر انتہا پسندوں کے حملے کے بعد شروع کیا گیا تھا۔ایک صوفی گروپ کی مسجد میں نمازِجمعہ کے وقت مسلح جنگجوؤں کے حملے میں کم سے کم تین سو نمازی جاں بحق ہوگئے تھے۔

مصری فوج کے ترجمان تامر الرفاعی نے منگل کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’ فوجی مہم کے آغاز کے بعد سے سیناء کے شمال اور وسطی علاقے میں فوجیوں اور پولیس کی کارروائیوں میں ایک اندازے کے مطابق ساڑھے چار سو انتہا پسند ہلاک ہو چکے ہیں۔

فوج کے فراہم کردہ اعداد وشمار کے مطابق اس کارروائی میں قریباً تیس فوجی بھی مارے گئے ہیں۔فوج نے انسانی حقوق کی تنظیموں کی جانب سے جزیرہ نما سیناء میں جنگجوؤں کے خلاف کارروائی سے عام شہریوں کے متاثر ہونے سے متعلق دعووں کو بھی مسترد کردیا ہے اور اس کا کہنا ہے کہ علاقے کے لوگ اس کارروائی کی حمایت کررہے ہیں اور انھیں انسانی امداد مہیا ہورہی ہے۔

مصری حکومت نے گذشتہ سال اپریل میں گرجاگھروں پر دو خودکش بم دھماکوں کے بعد ملک بھرمیں ہنگامی حالت نافذ کردی تھی ۔ مصری صدر عبدالفتاح السیسی نے منگل کے روز ہنگامی حالت کے نفاذ میں مزید تین ماہ کی توسیع کردی ہے۔

مصری فورسز صدر عبدالفتاح السیسی کے حکم پر فروری سے اسرائیل اور غزہ کی پٹی کی سرحد کے ساتھ واقع شورش زدہ علاقے شمالی سیناء میں انتہا پسند جنگجوؤں کے خلاف کارروائی کررہی ہیں۔ انھوں نے سکیورٹی فورسز کو تین ماہ میں جنگجوؤں کو شکست دینے کا حکم دیا تھا۔

مصری فوج کے بہ قول سیناء میں جنگجوؤں کے خلاف جاری آپریشن میں آرمی ، بحریہ اور فضائیہ کے درمیان بے مثال نظم اور رابطہ کاری ہے ۔ تاہم تجزیہ کاروں اور سفارت کاروں کا کہنا ہے کہ انھوں نے شمالی سیناء کو جنگجوؤں سے پاک کرنے کے لیے نئے جنگی حربوں کے کارآمد نتائج برآمد ہوتے نہیں دیکھے ہیں۔

مصری فوج جزیرہ نما سیناء کے علاوہ وسطی نیل ڈیلٹا اور لیبیا کی سرحد کے ساتھ واقع مغربی صحرا میں بھی ’’ آپریشن سیناء 2018ء ‘‘ کے نام سے جنگجوؤں کے خلاف کارروائی کررہی ہے ۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں