.

یمن کے لیے پٹرولیم مصنوعات کی سپورٹ جلد عدن پہنچے گی: سعودی سفیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے لیے سعودی عرب کے سفیر محمد بن سعید آل جابر نے ریاض میں یمن کے حوالے سے دل چسپی رکھنے والے کئی مغربی سفارت کاروں اور محققین اور کارکنان سے ملاقات کی۔

آل جابر یمن میں Yemen Comprehensive Humanitarian Operations کے مرکز کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر اور یمن کی تعمیر نو اور ترقی سے متعلق سعودی پروگرام کے نگراں بھی ہیں۔

ملاقات کے دوران آل جابر نے واضح کیا کہ یمن کے جنوبی شہر عدن کے لیے سعودی عرب کی پٹرولیم مصنوعات کے ذریعے سپورٹ رواں ماہ کے اواخر سے شروع کر دی جائے گی۔ اس کا مقصد بجلی کے اور پانی کے اسٹیشنوں کو سپورٹ فراہم کرنا ہے۔

سعودی سفیر کے مطابق یمن میں کئی منصوبوں پر پہلے ہی عمل درامد ہو چکا ہے۔ ان میں سيئون ہسپتال کا منصوبہ شامل ہے جو 5 مختلف کلینکس پر مشتمل ہے۔ آل جابر کے مطابق مذکورہ ہسپتال کو اسی معیار کے آلات اور ساز و سامان فراہم کیا گیا ہے جو مملکت کے ہسپتالوں میں استعمال ہوتے ہیں۔ اس کے علاوہ تعلیم، صحت اور زراعت میں کئی منصوبوں پر عمل درامد میں پیش رفت جاری ہے۔

سعودی سفیر نے بتایا کہ یمن کے جزیرے سقطری میں متعدد منصوبوں کو پایہ تکمیل تک پہنچایا گیا ہے۔ ان میں بجلی اور دیگر ترقیاتی منصوبے شامل ہیں۔

آل جابر کے مطابق مغربی سفارت کاروں اور کارکنان و محققین کو یمن میں انسانی امداد کی کارروائیوں کے سلسلے میں سعودی عرب اور عرب اتحاد کی کوششوں اور منصوبوں کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔ علاوہ ازیں یمن کی ترقی اور تعمیر نو سے متعلق سعودی پروگرام کی تفصیلات سے بھی آگاہ کیا گیا۔ اس سلسلے میں یمن کے کئی صوبوں میں عمل درامد جاری ہے۔ ان میں الجوف، مارب، حضرموت، المہرہ، سقطری اور الضالع شامل ہیں۔ اس موقع پر یمن کی معیشت کی سپورٹ کی اہمیت پر بھی روشنی ڈالی گئی اور اس حوالے سے مستقبل کے ویژن کو بھی بیان کیا گیا۔