عراق نے جعلی ویزوں کے حامل ایک ہزار ایرانیوں کو داخل ہونے سے روک دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عراق کی جنوبی سرحد پر سکیورٹی حکام نے گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ایک ہزار کے قریب ایرانی زائرین کو ملک میں داخل ہونے سے روک دیا۔ ان تمام ایرانی زائرین کے پاس جعلی ویزے تھے۔

عراق کی ٹورزم اتھارٹی نے ہفتے کے روز توقع ظاہر کی تھی کہ حضرت حسین رضی اللہ عنہ کے چہلم کے موقع پر بیس لاکھ سے زیادہ ایرانی زائرین عراق پہنچیں گے۔

چہلم کے موقع پر دنیا بھر سے لاکھوں شیعہ زائرین کربلا پہنچتے ہیں۔ ان میں بہت سے لوگ پیدل چل کر آتے ہیں۔

عراقی سکیورٹی ذریعے کے مطابق ایک ہزار کے قریب مذکورہ ایرانی زائرین کو بصرہ اور واسط کے جنوبی صوبوں میں جعلی ویزوں کے خلاف جاری مہم کے دوران ملک میں داخل ہونے سے روکا گیا۔

ذریعے نے مزید بتایا کہ عراقی سکیورٹی اداروں نے ایران کے ساتھ سرحد پر اقدامات کو سخت کر دیا ہے تا کہ زائرین کے داخلے کو منظّم شکل دی جا سکے۔ اس وقت چہلم کی مناسبت سے روزانہ ایک لاکھ سے زیادہ ایرانی زائرین عراق میں داخل ہو رہے ہیں۔

عراق میں حضرت حسین رضی اللہ عنہ کا چہلم 20 صفر (30 اکتوبر) کو منعقد کیا جائے گا۔

عراقی سکیورٹی فورسز نے ملک کے جنوبی صوبوں سے کربلاء آنے والے راستوں پر حفاظتی اقدامات کو انتہائی سخت کر دیا ہے۔ اس اقدام کا مقصد داعش تنظیم کی جانب سے متوقع حملوں کو روکنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں