.

حوثی باغیوں‌نے دو ملین بچے تعلیم سے محروم کر دیے، 3600 اسکول بند

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے وزیر تعلیم عبداللہ لملس نے کہا ہے کہ ایران نواز حوثی باغیوں‌نے ملک میں بچوں کی تعلیم پر بھی جنگ مسلط کر رکھی ہے۔ حوثیوں کی وجہ سے 19 لاکھ سے زاید بچے تعلیم کے حصول سے محروم ہیں اور قریبا 3600 اسکول اور تعلیمی ادارے بند ہوچکے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق یمنی وزیر نے بتایا کہ حوثیوں کی جانب سے مسلط کی گئی جنگ کے نتیجے میں 2000 پرائمری اسکول متاثر ہوئے ہیں یا انہں حوثیوں نے اپنے دیگر مذموم مقاصد کے لیے استعمال کیا۔ خانہ جنگی کی وجہ سے 67 فی صد اسکولوں کے تدریسی عملے کو تنخواہیں ادا نہیں کی جاسکیں۔

یمنی وزیر کا کہنا تھا کہ حوثی باغیوں کی ملک میں پھیلائی گئی بغاوت کے نتیجے میں دو ملین سے زاید بچے اسکول نہیں جا سکتے۔ یمن میں اتنی بڑی تعداد میں بچوں کا اسکول نہ جا سکنا ملک کےمستقبل کے لیے انتہائی خطرناک اور تباہ کن ثابت ہوگا۔