.

یمن : حوثیوں کی مجرمانہ غفلت نے گُردوں کے 27 مریضوں کی جان لے لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے صوبے اِب میں الثورہ جنرل ہسپتال کے طبّی ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ دانستہ غفلت کے سبب ایک ماہ کے دوران گردے ناکارہ ہونے کے مرض میں مبتلا 27 افراد فوت ہو گئے۔

حوثی ملیشیا کی جانب سے مقرر کردہ ہسپتال کے ڈپٹی ڈائریکٹر جبر الخولانی نے فیس بک پر اپنی پوسٹ میں بتایا ہے کہ "ان افراد کی موت کا سبب ڈائلیسز سے متعلق سامان اور آلات کی کمی نہیں بلکہ مقامی مارکیٹ سے دانستہ طور پر گھٹیا کوالٹی کے لوازمات کا خریدا جانا ہے۔ یہ لوازمات مطلوبہ معیار کے مطابق نہیں ہوتے ہیں اور ان سے صوبے میں گردے ناکارہ ہونے کے مرض میں مبتلا 550 سے زیادہ افراد کی زندگی کو خطرہ لاحق ہو گیا ہے"۔

الخولانی کے مطابق فوتگیوں کی وجوہات میں گردوں کی خرابی میں مبتلا افراد کا جگر کے وائرس سے متاثر ہونا شامل ہے۔ اس کی وجہ ڈائلیسز کے مراکز کے نگرانوں کی غفلت اور ڈائلیسز مشینوں کو مناسب طور پر جراثیم سے پاک نہ کرنا ہے۔

طبی ذرائع کے مطابق اکتوبر کے آغاز سے اب تک ناکارہ گردوں کے 27 مریض اپنی جانوں سے ہاتھ دھو چکے ہیں۔ ان میں 15 افراد صرف دو ہفتوں کے دوران فوت ہوئے۔