.

یمن میں ہزاروں سرکاری ملازمین کو نوکریوں سے نکالے جانے کا خطرہ`

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے وزیر اطلاعات معمر الاریانی نے یمنی ریاست کے "حوثیائے" جانے سے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ باغی ملیشیا کی جانب سے ہزاروں ملازمین کو نوکریوں سے نکالے جانے کا خطرہ ہے۔

منگل کے روز اپنی سلسلہ وار ٹوئیٹس میں الاریانی نے انکشاف کیا کہ حوثی ملیشیا ہزاروں سرکاری ملازمین کے ناموں کی فہرستیں تیار کر رہی ہے تا کہ ان افراد کو ریاست کے تمام انتظامی اداروں میں نوکریوں سے برخاست کیا جا سکے۔

الاریانی نے مزید بتایا کہ مسلسل تین برسوں سے تنخواہوں کی لُوٹ مار کے بعد اب ہزاروں سرکاری ملازمین کو ہٹا کر اُن کی جگہ حوثی ملیشیا کے ارکان کو لانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ یمنی وزیر کے مطابق "یہ اقدام باغی ملیشیا کی جانب سے ریاست کے حوثیائے جانے کی کڑی ہے۔ اس سلسلے میں ریاست کی انتظامیہ کے اندر حوثی مخالفین کا خاتمہ کیا جائے گا"۔