سیلاب میں غفلت برتنے کے ذمہ داروں کو سخت سزا دیں گے: اردن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اردن کے فرمانروا شاہ عبداللہ دوم نے کہا ہے کہ بحر مردار میں سیلاب کے نتیجے میں قیمتی انسانی جانوں کا ضیاع بہت بڑا المیہ ہے جس سے پوری قوم صدمے سے دوچار ہوئی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ سیلاب میں مارے جانے والے ہمارے بچے اور شہری ہیں اور ان کے عزیز واقارب کے دکھ میں ہم ان کے ساتھ برابر کے شریک ہیں۔ شاہ عبداللہ کا کہنا تھا کہ میں ذاتی طور پر پوری اردنی قوم سے تعزیت کرتا ہوں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق دارالحکومت عمان میں قائم الحسینیہ محل میں قومی پالیسی کونسل کے اجلاس سے خطاب میں شاہ عبداللہ دوم نے کہا کہ بحر مردار میں سیلاب کے دوران جاں بحق افراد کے حوالے سے غفلت برتنے والوں کا تعین کر کے انہیں سخت سزا دیں گے۔

خیال رہے کہ دو روز قبل اردن میں بحر مردار کے علاقے میں آنے سیلاب میں ایک اسکول بس بہہ گئی تھی جس کے نتیجے میں بچوں‌ سمیت 21 افراد جاں بحق اور 35 زخمی ہوگئے تھے۔

شاہ عبداللہ کا کہنا تھا کہ بحرمردار حادثے کے حوالے سے حتمی رپورٹ جلد سامنے آئے گی اور حادثے میں غفلت برتنے یا کسی بھی طرح ملوث ہونے والوں کو جواب دینا ہوگا۔ شاہ عبداللہ نے کہا کہ بحر مردار حادثے کی شفافیت کے ساتھ تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

اجلاس میں اردنی ولی عہد شہزادہ فیصل بن الحسین، شاہی مشیر اور نیشنل پالیسیز کونسل کے چیئرمین، وزیراعظم عمر الرزاز اور دیگر عہدیدار شریک ہوئے۔ اس موقع پر اردنی فرمانروا نے بحر مردار حادثے میں زخمی ہونے والے شہریوں کو بہترین طبی سہولیات مہیا کرنے کے احکامات دیے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں