قطر لیبیا میں دہشت گردی کی فنڈنگ کر رہا ہے : لیبیا شُوٹنگ فیڈریشن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لیبیا کی شوٹنگ فیڈریشن نے چند روز قبل اعلان کیا تھا کہ وہ آئندہ ماہ 15 سے 24 نومبر تک قطر کے دارالحکومت دوحہ میں ہونے والی 14 ویں عرب شوٹنگ چیمپین شپ کا بائیکاٹ کرے گی۔ فیڈریشن کے مطابق بائیکاٹ کا فیصلہ قطری حکام کی جانب سے لیبیا میں دہشت گردی کی سپورٹ کے سبب کیا گیا ہے۔

لیبیا کی شوٹنگ فیڈریشن کے صدر عادل قریش نے عرب فیڈریشن کے سربراہ کو ایک خط میں کہا ہے کہ "لیبیا میں جاری جنگ کے نتیجے میں سکیورٹی اور اقتصادی صورت حال کے بگڑنے کے سبب ملک میں شوٹنگ کا کھیل چار برس سے زیادہ عرصے سے مشکلات کا شکار ہے۔ مذکورہ جنگ میں قطر کی جانب سے فنڈنگ اور سپورٹ کے ناقابل تردید ثبوت موجود ہیں"۔

قریش کے مطابق قطر کا حکمراں نظام ان دنوں دہشت گردی کے لیے اپنی سپورٹ پر مختلف طریقوں سے پردہ ڈالنے کی کوشش کر رہا ہے۔ ان طریقوں میں کھیلوں کی سرگرمیوں کا راستہ بھی شامل ہے تا کہ لوگوں کی توجہ کو دوحہ کے بھیانک جرائم کی جانب سے ہٹایا جا سکے۔

لیبیا کی شوٹنگ فیڈریشن نے واضح کیا کہ "ہم قطر کی شوٹنگ فیڈریشن یا قطری عوام کے ہر گز خلاف نہیں۔ ہم اچھی طرح جانتے ہیں کہ ہم اولمپک منشور کی خلاف ورزی کر رہے ہیں اور ہم اس کی پوری ذمّے داری قبول کرتے ہیں"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں