.

’ایران پرامریکی پابندیوں سے ترکی استثنیٰ حاصل کر لے گا‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی نے توقع ظاہر کی ہے کہ ایران پر پرسوں سوموار سے عاید کی جانے والی امریکی پابندیوں سے انقرہ استثنیٰ حاصل کر لے گا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ترک وزیر توانائی فتاح دونمیز نے جمعہ کے روز صحافیوں سے بات چیت کے دوران کہا کہ امریکا نے ترکی سے کہا ہے کہ ایران پر عاید کردہ پابندیوں میں انقرہ کو استثنیٰ حاصل ہوگا۔

ادھر جمعہ کے روز ترک لیرہ ڈالر کےمقابلے میں 1.7 پوائنٹ کے اضافے کے بعد تین ماہ کی بلند ترین سطح پر آگیا۔ تین ماہ قبل امریکا اور ترکی کے درمیان بحران کی وجہ سے ترک لیرہ ڈالر کے مقابلے میں گر 5.51 پر آگیا تھا۔

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے جمعے کو ایک کانفرنس کال کے دوران استثنیٰ کے فیصلے کا اعلان کیا۔ لیکن اُنھوں نے اس بات کی وضاحت نہیں کی آیا کون سے ملکوں کو استثنیٰ دیا جائے گا یا یہ سہولت کب تک کے لیے ہوگی۔

پومپیو نے کہا کہ ’’ہمیں امید ہے کہ آٹھ علاقہ جات کے لیے عبوری اجازت دی جائے گی۔ لیکن صرف اُس صورت میں کہ اُنھوں نے خام تیل کے استعمال میں کافی کمی لانے کا عملی مظاہرہ کیا ہو، جب کہ دیگر کئی محاذوں پر تعاون کیا ہو اور یہ کہ اُنھوں نے خام مال کی درآمد کو بالکل ختم کرنے کی جانب اہم قدم اٹھایا ہو‘‘۔

اس سے قبل، ’بلوم برگ‘ نے اطلاع دی تھی کہ جنوبی کوریا، بھارت اور جاپان استثنیٰ دیے گئے ملکوں میں شامل ہیں۔ پومپیو نے کہا ہے کہ یورپی یونین کو استثنیٰ نہیں ملے گا۔

پومپیو نے مزید کہا کہ دو ملکوں کو ایرانی تیل کی درآمد بالکل بند کرنی ہوگی، جب کہ دیگر چھ ملکوں کو اپنی درآمدات ’’کافی حد تک‘‘ کم کرنی پڑیں گی۔