.

السیسی اور محمود عباس کے درمیان فلسطینی مصالحت پر بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ محمودعباس اور مصری صدر عبدالفتاح السیسی کے درمیان قاہرہ میں ملاقات ہوئی۔ اس ملاقات میں فلسطینی دھڑوں کے درمیان مصالحتی کوششوں پر بات چیت کی گئی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق فلسطینی صدر محمود عباس نے ایک اعلیٰ اختیاراتی وفد کے ہمراہ مصر کا دورہ کہا جہاں انہوں‌نے مصری صدر عبدالفتاح السیسی سے ملاقات کی۔ اس موقع پر مصری وزیرخارجہ سامح شکری، انٹیلی جنس چیف میجر جنرل عباس کامل اور دیگر عہدیدار بھی موجود تھے۔

مصری ایوان صدر کے ترجمان بسام راضی نے پریس کو جاری ایک بیان میں بتایا کہ فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ محمود عباس اور صدر السیسی کے درمیان ہونے والی بات چیت میں فلسطینی دھڑوں کے درمیان مصالحتی کوششوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اس کے علاوہ قضیہ فلسطین کے حوالے سے حالیہ ایام میں داخلی ،علاقائی اور عالمی سطح پرقضیہ فلسطین کے حوالے سے ہونے والی پیش رفت کا بھی جائزہ لیا گیا۔

ترجمان نے کہا کہ مصر سنہ 1967ء کی حدود میں آزاد فلسطینی مملکت کےقیام اور مشرقی بیت المقدس کو فلسطینی ریاست کا دارالحکومت بنائے جانے کے اصولی مطالبے پرقائم ہے۔ مشرق وسطیٰ میں قیام امن اور آزاد فلسطینی ریاست کے قیام کے حوالے سے کی جانے والی تمام مثبت کوششوں میں مصر تعاون جاری رکھے گا۔

اس موقع پر صدر عباس نے کہا کہ مصر فلسطینی ریاست کےقیام کے حوالےسے موثر کردار ادا کر سکتا ہے۔ انہوں‌ نے کہا کہ حکومت فلسطینی دھڑوں میں مصالحت کے لیے مصر کی کوششوں کا خیر مقدم کرتی ہے اور اس حوالے سے ہرممکن تعاون کیا جائے گا۔