.

موصل خطرے میں ہے : مقتدی الصدر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں الصدری گروپ کے سربراہ مقتدی الصدر کا کہنا ہے کہ شمالی شہر موصل کو خطرات کا سامنا ہے۔

منگل کے روز اپنی ٹوئیٹ میں الصدر نے لکھا "موصل خطرے میں ہے۔ دہشت گرد گروپ سرگرم ہیں اور بدعنوانوں کے ہاتھ کھوکھلے ہو رہے ہیں "۔

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں کے دوران موصل شہر میں دو کار بم دھماکے ہوئے جن میں عام شہریوں کو نشانہ بنایا گیا تھا۔

نینوی صوبے میں آپریشنز کمانڈر بریگیڈیئر جنرل نجم الجبوری یہ کہہ چکے ہیں کہ وہ صوبے کی سکیورٹی کی باگ ڈور کسی بھی فریق کو دینے کے لیے تیار نہیں ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ تمام سکیورٹی افسران پر لازم ہے کہ وہ اپنے فوجیوں کا مورال بلند کریں اور شہریوں کو خوف زدہ نہ کریں۔

واضح رہے کہ عراقی حکومت نے دسمبر 2017ء میں موصل کو داعش تنظیم سے آزاد کرا لینے اور سکیورٹی آپریشنز کے اختتام پذیر ہونے کا اعلان کیا تھا۔ تاہم حکومت ابھی تک آزاد کرائے جانے والے شہروں کی تعمیر نو اور وہاں شہریوں کی واپسی کے معاملات پر کوئی فیصلہ کن موقف اختیار نہیں کر سکی۔