.

اقوام متحدہ کے طیارے کو صنعاء سے حوثی زخمیوں کو منتقل کرنے کی اجازت

حوثی زخمیوں کی منتقلی کی اجازت اعتماد سازی کے لیے اہم قدم ہے:عرب اتحاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں دستوری حکومت کی بحالی کے لیے سرگرم عرب فوجی اتحاد نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ کے ایلچی مارٹن گریفیتھ نے صنعاء سے حوثی ملیشیا کے 50 زخمیوں کو انسانی بنیادوں پر مسقط منتقل کرنے کی اجازت مانگی ہے جس کے بعد 'یو این' کو حوثی زخمیوں کو اومان منتقل کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عرب اتحادی فوج کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے ایک بیان میں کہا کہ اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے خصوصی ایلچی برائے یمن نے ایک درخواست دی تھی جس میں صنعاء میں حوثیوں کے 50 زخمیوں کو علاج کے لیے بیرون ملک لے جانے کی اجازت مانگی گئی تھی۔

ترجمان نے بتایا کہ باہمی اعتماد سازی اور انسانی جذبے کے تحت حوثی زخمیوں کو بیرون ملک علاج کے لیے جانے کی اجازت دے دی گئی ہے۔ توقع ہے کہ یہ اقدام سویڈن کی میزبانی میں یمن کے متحارب فریقین کے درمیان ہونے والی بات چیت کو آگے بڑھانے میں مدد فراہم کرے گا۔

کرنل المالکی نے واضح کیا کہ آج سوموار کو اقوام متحدہ کا ایک کمرشل طیارہ صنعاء پہنچے گا جس کی مدد سے وہاں پر موجود حوثیوں کے 50 زخمیوں کو اومان لے جایا جائے گا۔ اقوام متحدہ کے طیارے کے ساتھ تین ڈاکٹر بھی لا رہےہیں جب کہ ایک ڈاکٹر صنعاء سے بھی زخمیوں کے ساتھ جائے گا۔

المالکی کا کہنا تھا کہ عرب اتحاد نے انسانی جذبے کے تحت حوثیوں کو انسانی امداد مہیا کرنے میں کوئی رکاوٹ کھڑی نہیں کی ہے۔ عرب اتحاد یمن میں حوثیوں کو مذاکرات کی میز پر لانے کے لیے اقوام متحدہ کے ایلچی کی بھرپور حمایت کرتا رہا ہے۔ اس کے علاوہ حوثیوں کی ہٹ دھرمی کے باوجود عرب اتحاد نے جنگ سے متاثرہ علاقوں میں امدادی آپریشن شروع کیے۔