حزب اللہ کی سرنگیں خطے میں ایرانی جارحیت کا ثبوت ہے: نیتن یاھو

عالمی برادری سے حزب اللہ پر مزید پابندیاں عاید کرنے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے لبنان کی سرحد پرزیرزمین حزب اللہ کی جانب سے کھودی گئی سرنگوں کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ سرنگیں خطے میں ایرانی جارحیت کا کھلا ثبوت ہیں۔ انہوں نے لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ پر مزید اقتصادی پابندیاں عاید کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق نیتن یاھو نے لبنان کی سرحد سے متصل اس علاقے کا دورہ کیا جہاں اسرائیلی فوج حزب اللہ کی مبینہ سرنگوں کو تباہ کرنے کے لیے آپریشن جاری رکھے ہوئے ہے۔ ان کے اس دورے کے ہمراہ بعض ممالک کے سفیربھی موجود تھے۔

انہوں‌نے کہا کہ حزب اللہ کی سرنگیں خطے میں ایرانی جارحیت کا کھلا ثبوت اور واضح مثال ہیں۔

سفیروں سے گفتگو کرتے ہوئے اسرائیلی وزیراعظم نے کہا کہ ہمارے دشمن سرنگوں کو اسلحہ کے طورپر استعمال کرتے ہیں۔ حزب اللہ اور حماس کے پاس یہ ایک جنگی حربہ ہے۔ جب بھی ہمیں ان کے خلاف کارروائی کی ضرورت پڑی گریز نہیں کریں گے۔ جوہماری زندگیوں کو خطرے میں ڈالنے کی کوشش کرےاس کے ساتھ کوئی نرمی نہیں‌برتی جائے گی۔ حزب اللہ اور حماس دونوں کو اس کا اندازہ ہے۔

انہوں‌نے کہا کہ ایران کی سرگرمیوں کی مذمت کے ساتھ ساتھ حزب اللہ اور حماس پر بھی مزید پابندیاں عاید کی جانی چائیں۔ ہمیں امید ہے کہ حزب اللہ کے خلاف مزی اقتصادی اور معاشی پابندیاں عاید کی جائیں گی۔

خیال رہے کہ اسرائیلی فوج نے "شمال کی ڈھال" کےنام سے لبنان کی سرحد پر سرنگوں کی مسماری کا آپریشن شروع کیا ہے۔ اسرائیل نے دعویٰ‌کیا ہے کہ حزب اللہ نے سرحد پر متعدد مقامات پر اسرائیل کے اندر تک سرنگیں کھود رکھی ہیں اور وہ دہشت گردوں کو اسرائیل میں داخل کرنا چاہتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں