مصر : معاون گورکن کی بھرتی میں رشوت وصول کیے جانے کا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصر کے صوبے اسکندریہ میں حکام نے اُس سرکاری عہدے دار کو حراست میں لے لیا ہے جس نے ایک نوجوان کو "معاون گورکن" کی اسامی پر بھرتی کے لیے اس سے رشوت وصول کی تھی۔

مصری سکیورٹی اداروں کو ایک نوجوان کی جانب سے یہ شکایت موصول ہوئی تھی کہ اسکندریہ کے مغربی علاقے میں "وائل" نامی ایک سرکاری عہدے دار نے معاون گورکن کے طور پر بھرتی کے واسطے نوجوان سے 1.5 لاکھ مصری پاؤنڈ رشوت طلب کی تھی۔

بعد ازاں یہ بات سامنے آئی کہ مذکورہ عہدے دار نے صوبائی حکومت کی جانب سے قبرستانوں کے لیے اعلان کردہ گورکن اور معاون گورکن کی اسامیوں کے حوالے سے اس نوجوان کے ساتھ ساز باز کی۔ اس عہدے دار نے رشوت وصول کرنے کے عوض درخواست دہندگان کے انٹرویو کے دوران اپنے منصب سے فائدہ اٹھایا اور مطلوبہ اسامی پر نوجوان کے تقرر کے حوالے سے تمام تر اقدامات مکمل کیے۔

ملزم کو اس وقت حراست میں لیا گیا جب وہ طے شدہ رقم کی پہلی قسط 20 ہزار مصری پاؤنڈز کی صورت میں وصول کر رہا تھا۔ بعد ازاں ملزم نے پورے واقعے کا اعتراف کر لیا۔


مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں