.

اسرائیل کا لبنان کی سرحد پر حزب اللہ کی دوسری سرنگ کی نشاندہی کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی فوج نے کہا ہے کہ لبنان کی سرحد پر متمرکز اس کے اہلکاروں نے لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کی ایک اور سرنگ کا پتا چلایا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ہفتے کے روز اسرائیلی فوج نے ایک بیان میں کہا کہ مبینہ طورپر حزب اللہ کے عناصر کو بھی آپس میں یہ باتیں کرتے سنا گیاکہ حزب اللہ نے سرحد پر حزب اللہ کی دوسری سرنگ کی موجودگی کا دعویٰ کیا ہے۔

اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ تین افراد کی باتیں ریکارڈ کی گئی ہیں۔ جو بہ ظاہر حزب اللہ کے جنگجو لگتے ہیں۔ وہ اسرائیلی فوج کے قریب آئےاور انہوں نے ایک اور سرنگ کی موجودگی کے بارےمیں ایک دوسرے سے بات چیت کی اور ساتھ ہی کہا کہ اسرائیلی فوج نے دوسری سرنگ کی بھی نشاندہی کردی ہے۔

اسرائیلی فوج کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ سرحد پر متمرکز فوجیوں نے حزب اللہ کی ایک اور سرنگ کا پتا چلایا ہے۔ جسے دھماکہ خیز مواد کےذریعے تباہ کردیا گیا تاکہ حزب اللہ اسے اسرائیل کے خلاف دہشت گردی کے مقاصد کے لیےاستعمال نہ کرسکے۔

یہ سرنگ مغربی الجلیل کے علاقے میں کھودی گئی ہے۔ اس علاقے میں حزب اللہ نے کل 3 سرنگیں کھودی ہیں جن میں سے دو کا پتا چلانے کے بعد انہیں تباہ کردہا گیا ہے۔اسرائیلی فوج کا کہناہے کہ حزب اللہ نے ایک سرنگ سرحد سے اندر تک کھودی تھی جو لوگوں کے گھروں کے نیچے سے گذر کر اسرائیل کے اندر تک پہنچائی گئی تھی۔

ادھر لبنانی حکومت نے کہا ہے کہ اسرائیلی فوج نے سرحد پر گشت کرنے والے لبنانی فوج پر ہوائی فائرنگ کی ہے۔

لبنانی خبر رساں اداروں کے مطابق قابض اسرائیلی فوج نے کروم الشراقی کے مقام پر گرین لائن کے قریب لبنانی فوجیوں پر فائرنگ کی۔ تاہ اس فائرنگ میں کسی قسم کے جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ملی

خیال رہے کہ گذشتہ ہفتے اسرائیلی فوج نے لبنان کی سرحد پر حزب اللہ کی طرف سے کھودی گئی سرنگوں کی موجودگی کا دعویٰ کیا تھا جس کےبعد صہیونی فوج نے "شمال کی ڈھال" کے نام سے ان سرنگوں‌کی مسماری کے لیے آپریشن شروع کیا گیا۔