.

شام:عراقی طیاروں کی کارروائی میں ابوبکر البغدادی کے 16 حواری ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کی وزارت داخلہ کے مطابق عراقی فضائیہ کے ایف 16 طیاروں نے شام کے قصبے سوسہ میں داعش تنظیم کے ارکان کے ایک مجمع کو بم باری کا نشانہ بنایا۔

ایک زمینی کمانڈر نے بتایا کہ کارروائی میں داعش کے سربراہ ابوبکر البغدادی کے 16 معاونین مارے گئے۔

کمانڈر کے مطابق ایک دوسرے حملے میں داعشیوں کے ایک اور ٹھکانے پر بم باری کی گئی۔ اس کے نتیجے میں 13 خود کش بم بار اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ یہ افراد صحرا کے راستے عراق میں داخل ہونے کی تیاری کر رہے تھے تا کہ بغداد، کربلا، سامراء اور کرکوک میں دہشت گرد کارروائیاں کر سکیں۔

زمینی کمانڈر نے بتایا کہ مارے جانے والوں میں داعش کا عراقی وزیر جنگ مشتاق عناد ہـرم المحمدی، البغدادی کا عراقی نائب سجاد علی حسین الحسناوی، صحرائی علاقے کا نگراں عبد الحـمـيـد نـمـضـحی السلمانی جو شام اور عراق کے درمیان خود کش حملہ آوروں کو منتقل کرنے کا ذمے دار تھا، داعش کے آپریشن روم کا امیر جو شام، عراق اور بیرون ممالک دہشت گرد کارروائیوں کی نگرانی کرتا تھا، شـاكـر الـحـردانی جو داعش کے میزائل انجینئرنگ پروگرام سے تعلق رکھتا تھا، داعش کا سکیورٹی ذمے دار ابو صالح العبيدی اور شام میں خود کش بم باروں کا یمنی سربراہ ابو حمزہ اہم ترین افراد ہیں۔