.

برطانیہ : شامی بیوی اور ساس کے قاتل افغان نوجوان کو32 سال قید کی سزا کا حکم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانیہ میں پیر کے روز عدالت نے بیوی اور ساس کو قتل کرنے والے 21 سالہ افغان نوجوان جانباز ترین کو 32 سال قید کی سزا سنائی ہے۔

تفصیلات کے مطابق رواں سال 26 اگست کی رات جانباز نے شام سے تعلق رکھنے والی اپنی 22 سالہ بیوی رنیم عودہ اور اس کی 49 سالہ ماں خولہ سلیم کو موت کی نیند سلا دیا تھا۔ جانباز نے پہلے رنیم کو چھرے کے واروں کا نشانہ بنایا اور جب اس کی ساس اپنی بیٹی کے دفاع کے لیے درمیان میں آئی تو سخت دل داماد نے اسے بھی موت کے گھاٹ اتار دیااور پھر جائے واردات سے فرار ہو گیا۔ پولیس نے جرم کے ارتکاب کے 3 روز بعد قاتل کو گرفتار کر لیا تھا۔

یہ واقعہ جانباز کی بیوی کے گھر والوں کی رہائش گاہ کے باہر پیش آیا جو برمنگھم شہر سے 10 کلو میٹر دور قصبےSolihull میں واقع ہے۔

عدالتی کارروائی کے دوران واضح ہوا کہ جانباز کی بیوی رنیم اسے چھوڑ کر اپنے گھر والوں کے پاس لوٹ آئی تھی۔ اس لیے کہ رنیم کو یہ انکشاف ہوا تھا کہ جانباز نے ایک اور عورت سے بھی شادی کر رکھی ہے اور وہ کبھی کبھی اسی علاقے میں واقع ایک گھر میں اپنی دوسری بیوی کے ساتھ قیام کرتا ہے۔ رنیم نے پولیس کو اس معاملے سے آگاہ کیا اور بتایا کہ جانباز اسے دھمکیاں دیتا ہے اور مار پیٹ بھی کرتا ہے۔ اس پر جانباز نے اپنی بیوی سے چھٹکارہ حاصل کرنے کا منصوبہ بنایا۔ آخرکار 26 اگست کی رات اسے یہ موقع مل گیا جب رنیم اپنی والدہ کے ساتھ شیشہ پینے کے لیے ایک کیفے خانے میں گئی تھی۔ برطانوی پولیس کی جانب سے جاری ایک وڈیو میں اس بھیانک جرم کے متعلق تمام تر تفصیلات موجود ہیں۔

وڈیو کے مطابق رنیم ، اس کی ماں اور ایک خاندانی دوست کیفے خانے میں گئے۔ وہاں جانباز کا دونوں ماں بیٹی کے ساتھ جھگڑا ہوا اور اس دوران جانباز کے ہاتھ میں چھرا یا کوئی خطرناک آلہ موجود تھا۔ بعد ازاں رنیم اور اس کی ماں کیفے خانے سے نکل گئیں۔ اس دوران رنیم نے پولیس کو فون پر واقعے کی اطلاع دی تاہم پولیس کے پہنچنے سے قبل ہی رنیم وہاں سے جا چکی تھی۔ بعد ازاں سی سی ٹی وی کیمرے میں جانباز رنیم کے گھر والوں کے مکان کی جانب اپنی گاڑی میں جاتا ہوا دکھائی دیا اور کچھ دیر بعد وہاں سے فرار ہوتا نظر آیا۔ درمیان کے واقعے کے مناظر کی عکس بندی نہیں ہو سکی۔ وڈیو میں اس کے بعد آنے والے مناظر میں جانباز دوسرے کپڑوں میں بدلے ہوئے حلیے کے ساتھ نظر آ رہا ہے۔ اس نے اپنی صورت کو تھوڑا تبدیل کر لیا تھا مگر تین روز کے بعد آخرکار گرفتار کر لیا گیا۔