اسرائیلی فوجی عدالت سے فلسطینی بچے کو35 سال قید اور بھاری جرمانہ کی سزا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیل کی فوجی عدالت نے زیرحراست ایک 17سالہ فلسطینی بچے کو 35 سال قید اور 10 لاکھ شیکل جرمانہ کی سزا سنائی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق کم عمر فلسطینی لڑکے ایھم ہاسم صباح کو اسرائیلی عدالت کی طرف سے 35 سال قید اور بھاری جرمانہ کی سزا سنائی۔ باسم صباح مقبوضہ بیت المقدس کے قلندیا پناہ گزین کیمپ کے رہائشی ہیں۔ اسے اسرائیلی فوج نے 15 سال کی عمر میں دو سا قبل حراست میں لیا تھا۔

آج منگل کو صہیونی عدالت "عوفر" باسم صباح کو طویل قید اور بھاری جرمانہ کی سزا سنائی۔ باسم صباح کو اسرائیلی فوج نے گولیاں مارنے اور زخمی کرنے کے بعد حراست میں لیا تھا۔ اس کےکندھے اور بائیں پائوں میں گولیاں ماری گئی تھیں جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوگیا تھا۔

اسرائیلی فوج نے اسے اس کے ساتھی عمر الریماوی سمیت 2015ء کو ایک اسرائیلی فوجی لیفی کو چار سے وار کرکے ہلاک کرنے کے الزام میں گرفتار کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں