.

ایران میں ادویات کا بحران پابندیوں کا نتیجہ نہیں: امریکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے ایران میں جاری ادویات کے بحران کے حوالے سے وضاحت کی ہے کہ ادویات کی قلت کا تہران پرعاید کی جانے والی اقتصادی پابندیوں کے ساتھ کوئی تعلق نہیں۔ امریکا نے ایران کے صحت کے شعبے پر پابندیاں عاید نہیں کی ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ایران کے لیے امریکی ایلچی برین ہوک نے امریکا کے فارسی ریڈیو سے بات کرتےہوئے کہا کہ ایرانی عہدیداروں کی طرف سے ادویات کی قلت کے بحران کو امریکی پابندیوں کے ساتھ جوڑنے کا کوئی جواز نہیں۔

انہوں‌نے کہا کہ ایران صحت کے جس بحران اور ادویات کی قلت سے گذر رہا ہے تو وہ امریکا کی جانب سے ایرانی پاسداران انقلاب پر عاید کی جانے والی پابندیوں کا نتیجہ نہیں۔

امریکی مندوب کا کہنا ہے کہ ایرانی عہدیدار یہ دعویٰ‌کررہے ہیں کہ ملک میں جاری ادویہ کا بحران امریکا کی طرف سے عاید کی جانے والی پابندیوں کا نتیجہ ہے مگر یہ من گھڑت دعویٰ ہے۔

برین ہوک کا کہنا تھا کہ ایرانی عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کامیاب نہیں ہوسکتی۔ ایرانی عوام انٹرنیٹ کے ذریعے امریکی وزارت خزانہ کی اس فہرست کا خود مطالعہ کرسکتے ہیں جس میں صاف بتایا گیا ہے کہ ایران میں خوراک، ادویات اور طبی سامان پر پابندیاں عاید نہیں کی گئی ہیں۔

برین ہوک کا کہنا تھا کہ ایران میں ادویات کے بحران کے پیچھے ایران بنکوں کی جانب سے بین الاقوامی قوانین کی پابندی نہ کرنا اور امدادی سامان سے لدے ٹرک ایران داخل ہونے میں دشواری ہے۔ جہاں تک ایران پر امریکا کی اقتصادی پابندیوں کا معاملہ ہے خوراک اور صحت پابندیوں سے مستثنیٰ ہیں۔