حزب اللہ گائیڈڈ میزائلوں کی نئی فیکٹریاں قائم کررہی ہے: نیتن یاھو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ لبنان کی عسکریت پسند تنظیم حزب اللہ نے گائیڈڈ میزائل تیار کرنے والی فیکٹریاں بند کر دی ہیں اور وہ اب گائیڈڈ میزائلوں کے لیے نئی فیکٹریاں بنا رہی ہے۔

اسرائیلی وزیر اعظم نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اس اجلاس سے چندگھنٹے قبل ایک اکنامک فورم سے خطاب میں کہی جس میں حزب اللہ کے معاملات پر بحث متوقع تھی۔اسرائیلی وزیراعظم کا کہنا تھا کہ یہ فیکٹریاں بیروت ایئرپورٹ کے قریب زیر زمین واقع تھیں تاہم اب انہیں بند کر دیا گیا ہے۔

تاہم نیتن یاہو کا کہنا تھا کہ حزب اللہ ایسی فیکٹریاں دیگر جگہوں پر کھولنے کی کوشش میں ہے۔اسرائیل اس سال ستمبر میں گائیڈڈمیزائل معلومات کو منظر عام پر لایا تھا۔

خیال رہے کہ 27 ستمبرکو جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر نیتن یاھو نے لبنان میں حزب اللہ کی تین میزائل فیکٹریوں کی تصاویر دکھائی تھیں۔ نیتن یاھو نے دعویٰ کیا تھا کہ ان فیکٹریوں میں حزب اللہ گائیڈڈ میزائل تیار کررہی ہے۔ نیتن یاھو نے دعویٰ‌کیا تھا کہ حزب اللہ کی فیکٹریوں میں ایک ہزار سے زاید میزائل موجود ہیں۔یہ اسلحہ گودام اوزاعی، بیروت ہوائی اڈے کے قریب اور کمیل شمعون اسپورٹ سٹی کے نیچے قائم ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں