.

سعودی عرب میں پہلی لیڈی 'ٹوریسٹ گائیڈ' کو لائسنس جاری!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں سیاحت کے شعبے میں رہ نمائی کے لیے اب تک مردوں کا غلبہ رہا ہے مگر مملکت میں پہلی بار ایک خاتون کو "ٹوریسٹ"گائیڈ کا لائسنس جاری کیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق حنان بنجر سعودی عرب کی پہلی لیڈی ٹوریسٹ گائیڈ کا لائسنس حاصل کرنے میں کامیاب ہوئی ہیں۔

حنان بنجر کو یہ لائسنس جاری کرنے سے قبل جنرل ٹوررزم اتھارٹی اورقومی ثقافتی مرکز کے زیراہتمام متعدد کورسز کرائے گئے۔ اس کے علاوہ مختلف عرب ممالک میں حجاج کرام کے طواف اور دیگر امور کی رہ نمائی کےلیے کام کرنےوالے اداروں کے تعاون سے بھی انہیں رہ نمائی بہم پہنچائی گئی۔ اس دوران حنان بنجر کو سیاحت کے فروغ اور سیاحوں کی رہ نمائی بالخصوص مکہ معظمہ کے تاریخی اور سیاحتی مقامات کے بارے فیلڈ پروگرامات کی مدد سے انہیں سیاحت کی گائیڈ کے طورپرتعینات کیا گیا۔

حنان بنجر نے 'العربیہ ڈاٹ نیٹ' سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میں نے سیاحت کے شعبے میں اپنے شوہر کے توسط سے آئی۔ میرے شوہر بیرون ملک طواف اور حج کےامور کی رہ نمائی فراہم کرتے ہیں اور انہوں نے پانچ سال ملائیشیا میں گذارے۔ اس دوران میں نے بھی شوہر کے ہمراہ بعض سیاحتی پروگراموں میں حصہ لیا۔ وہ ہمیشہ سیاحت کے لیڈی گائیڈ کے لائسنس کے حصول کی ترغیب دیتے رہے۔ انہوں نے بیرون ملک مختلف ٹوررزم تنظیموں کے ساتھ کورسز کرائے۔ مجھے تاریخی، سیاحتی اور تہذیبی اہمیت کے حامل مقامات کے دوروں اور لوگوں کو ان کے بارے میں معلومات فراہم کرنے کے مختلف طریقوں سے آگاہ کیا گیا۔

ایک سوال کے جواب میں حنان نے کہا کہ سعودی عرب میں سیاحت کی رہ نمائی کے کئی پروگرامات اور ادارے لائسنس جاری کرتے ہیں۔ حج اور عمرہ کے لیے آنے والے زائرین کی رہ نمائی کے لیے کسی بھی خاتون گائیڈ کو خطے کے تاریخی اور سیاحتی مقامات کا علم ہونا چاہیے۔