یمن کے شہر حرض میں حوثی باغیوں کے گرد گھیرا تنگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن کے شمال مغربی صوبے حجہ میں سرکاری فوج نے ہفتے کے روز عرب اتحاد کی معاونت سے سرحدی شہر حرض کے مشرق میں نئے علاقوں کو آزاد کرا لیا۔

ایک عسکری ذریعے کے مطابق یمنی فوج نے اچانک حملہ کر کے حرض شہر اور المخازن گاؤں کے اندر حوثی ملیشیا کو مکمل طور پر گھیرے میں لے لیا ،،، اور یمنی فوج کے ہراول دستے حیران کے محاذ پر پہنچ گئے۔ اس دوران لڑائی میں باغی حوثی ملیشیا کو بھاری جانی اور مادی نقصان اٹھانا پڑا۔

ادھر یمن کی فوج کے چیف آف اسٹاف جنرل عبداللہ النخعی نے باور کرایا ہے کہ "تمام اہداف کے پورے ہونے ، آئینی حکومت کا مکمل کنٹرول واپس آنے، بغاوت کا خاتمہ ہونے اور یمن میں امن و استحکام یقینی بنائے جانے تک مختلف محاذوں پر عسکری کارروائیاں جاری رہیں گی"۔

النخعی نے ہفتے کے روز مارب صوبے میں صراوح کے محاذ پر عسکری کارروائیوں اور ان کے نتیجے میں یمنی فوج اور عوامی مزاحمت کاروں کو حاصل ہونے والی کامیابیوں کو سراہا۔


مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں